ورلڈ ہیڈر ایڈ

ملکی معیشت اب پرانے طریقہ کار کے مطابق نہیں چلائی جاسکتی: وزیراعظم کا تاجروں ،صنعت کاروں سے خطاب

کراچی:وزیر اعظم کا ایک روزہ دورہ کراچی بڑی اہمیت کا حامل بن گیا ہے اور اس وقت ملک اور بیرون ملک بزنس کمیونٹی وزیراعظم کے دورہ کراچی اور مصروفیات پر نظر رکھے ہوئے ہیں.اپنے دورہ کراچی کے دوران وزیراعظم عمران خان نے کہا ہےکہ ملکی معیشت اب پرانے طریقہ کار کے مطابق نہیں چلائی جاسکتی۔

عمران خان سے گورنر ہاؤس میں تاجروں اور آٹوموٹوو سیکٹر کے وفد نے ملاقات کی جس میں سراج قاسم تیلی، جنید اسماعیل مکدہ، زبیر موتی والا اوردیگر بھی موجود تھے جب کہ حکومتی ٹیم سے گورنر سندھ عمران اسماعیل، چیئرمین بورڈ آف انویسٹمنٹ سید زبیر حیدر گیلانی، گورنر اسٹیٹ بینک ڈاکٹر رضا باقر، مشیر اصلاحات عشرت حسین، چیئرمین ایف بی آر شبر زیدی، مشیر تجارت عبدالرزاق داؤد، مشیر خزانہ ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ، وفاقی وزیر اقتصادی امور حماد اظہر، وزیر بحری امور علی زیدی اور وزیر آبی وسائل فیصل واوڈا بھی موجود تھے۔

وزیر اعظم عمران خان سے ملاقات میں وفود نے ٹیکس نظام میں اصلاحات، مہنگائی پر کنٹرول، اسمگلنگ کی روک تھام، کاروبار میں آسانی، سرمایہ کاری میں فروغ، روزگار کے مواقع بڑھانے اور محصولات میں اضافہ کے حوالے سے بھی تجاویز پیش کی گئیں۔عمران خان تمام وفود کی تمام تجاویز کو بڑے غور سے سنا اور ان پر مزید مشاورت کرنے کا بھی کہا .وزیراعظم نے تاجروں کو یقین دہانی کرائی کہ حکومت ان کے تمام تر مسائل حلے کرے گی

تاجروں سے گفتگو کرتے ہوئے وزیراعظم کا کہنا تھا کہ میرے آنے کا مقصد یہی ہے کہ آپ کے مسائل حل کروں، میری پوری معاشی ٹیم یہاں موجود ہے تاکہ مسائل کا فوری حل نکالا جائے، ہماری اولین ترجیح غربت کا خاتمہ اور معاشی عمل کو تیز کرنا ہے جس میں آپ کی مدد چاہیے، کاروباری برادری پارٹنر بن کر حکومت کے ساتھ کام کرے۔

عمران خان اپنی معاشی ٹیم کے ہمراہ ایک روزہ دورے پر کراچی پہنچے ہیں، وفاقی وزراء علی زیدی، حماد اظہر، فیصل واوڈا سمیت مشیر تجارت عبدالرزاق داؤد اور مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ، ڈاکٹر عشرت حسین اور چیئرمین ایف بی آر شبر زیدی بھی وزیراعظم کے ہمراہ ہیں۔یاد رہے کہ کراچی پاکستان کی معیشت کا ستون گردانا جاتا ہے اور حکومت اور دیگر ذمہ دار ادارے بھی کراچی میں امن وامان اور کاروباری معاملات کو بہتر کرنے کےلیے مسلسل کوشاں ہیں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.