ساہیوال:لرزہ خیز واقعہ،تایا نے بھتیجے کے ساتھ کیسا سلوک کیا اور وہ بھی صرف پانچ سو کی خاطر

ساہیوال(نمائندہ باغی ٹی وی)انسان خونی درندے کا دھوپ بھی دھار سکتا ہے،ساہیوال میں گذشتہ روز ایسا ہی ہوا،جب نواحی گاؤں میں تایا نے اپنے ہی بھتیجے کی جان لے لی،تفیصلات کے مطابق تھانہ یوسف والا کی حدود میں واقع گاؤں 60/5 ایل کے رہائشی عمانوائیل مسیح نے اپنی بھاوج کو دیے گئے 500 روپے ادھار کی واپسی کا مطالبہ کیا اور طیش میں آکر بھاوج پر تشدد شروع کردیا،اسی دوران عورت کا چھ سالہ بچہ جس کا نام اسد بتایا جارہا ہے اپنی والدہ کو بچانے کی کوشش میں تایا کے سامنے آگیا،لیکن سفاک تایا نے تشدد روکنے کی بجائے ڈنڈوں کی بارش کرکے اپنے ہی سگے بھتیجے کی جان لے لی جبکہ بچے کی والدہ کو بھی تشدد کرتے ہوئے شدید زخمی کردیا اور بازو کی ہڈی توڑ ڈالی،پولیس نے مقدمہ درج کرکے ملزم کو گرفتار کرلیا جبکہ متائثرہ عورت اور اس کے بچے کی لاش کو ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر ہسپتال منتقل کردیا گیا ہے،صرف 500 روپے کی خاطر سگے بھتیجے کو قتل کردینے کا یہ واقعہ ایک طرف انسانیت کو شرما رہا ہے تو دوسری طرف پاکستان میں پھیلی غربت و مفلسی کی وجہ سے لوگوں کی مجبوری و لاچارگی کی بھی واضح مثال ہے،متاثرہ خاندان کو حصول انصاف کے لیے ابھی کہاں تک دھکے کھانے پڑتے ہیں یہ بھی ایک الگ سوال ہے

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.