fbpx

پنجشیر جنگ میں قومی مزاحمتی فرنٹ کا اہم ترین رہنما اور ڈاکٹر عبداللہ عبداللہ کا بھانجا ہلاک

پنج شیر پر قبضے کی جنگ کے دوران قومی مزاحمتی فرنٹ کا ترجمان مارا گیا جس کی تصدیق افغانستان کی وزارت اطلاعات کے سابق ترجمان طارق آرین نےکی ہے-

باغی ٹی وی :تفصیلات کے مطابق افغانستان کی وزارت اطلاعات کے سابق ترجمان طارق آرین نے تصدیق کی ہے کہ قومی مزاحمتی فرنٹ کے ترجمان فہیم دشتی طالبان سے جنگ کے دوران ہلاک ہوگئے۔

طالبان اور مزاحمتی فرنٹ کے جنگ کے دوران فہیم دشتی کافی متحرک رہے اور گاہے ویڈیو پیغامات کے ذریعے زمینی حالات کی خبریں دیا کرتے تھے وہ افغانستان کے سابق چیف ایگزیکٹو اور قومی مصالحتی کونسل کے سربراہ ڈاکٹر عبداللہ عبداللہ کے بھانجے تھے۔

کاؤنٹر ٹیرارزم تھنک ٹینک کے ڈپٹی ڈائریکٹر فاران جعفری نے قومی مزاحمتی فرنٹ کے ذرائع کے حوالے سے ایک ٹویٹ میں تصدیق کی کہ فہیم دشتی ہلاک ہوچکے ہیں۔ اس کے علاوہ آماج نیوز، افغان اینکر پرسن مسلم شہزاد اور صحافی بشیر احمد قسانی نے بھی فہیم دشتی کی ہلاکت کی تصدیق کی ہے۔

خیال رہے کہ طالبان اور قومی مزاحمتی فرنٹ کے درمیان پنج شیر پر قبضے کی جنگ جاری ہے طالبان اب تک پنج شیر کے تمام اضلاع پر قبضہ کرچکے ہیں تاہم صوبائی دارالحکومت کے کچھ علاقوں میں تاحال جھڑپیں ہو رہی ہیں۔ مزاحمتی فرنٹ کے رہنما احمد مسعود نے طالبان کو مشروط مذاکرات کی پیشکش کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر طالبان اپنے حملے روک دیں تو شمالی اتحاد بھی لڑائی بند کردے گا۔

وادی پنجشیر سے تعلق رکھنے والے سابق جہادی کمانڈر احمد شاہ مسعود کے صاحبزادے احمد مسعود وادی پنجشیر میں مزاحمتی فوس کی قیادت کر رہے ہیں جب کہ اطلاعات کے مطابق مفرور نائب صدر امر اللہ صالح بھی وہیں موجود ہیں۔

آزادی اور انصاف کے لئے شروع کی گئی جنگ سےکنارہ کشی اختیار نہیں کریں گے احمد مسعود

Facebook Notice for EU! You need to login to view and post FB Comments!