پی سی بی نے اپنا ایک اور وعدہ پورا کردیا، احسان مانی

پی سی بی نے اپنا ایک اور وعدہ پورا کردیا، احسان مانی

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین احسان مانی نے ایچ بی ایل پاکستان سپر لیگ 2020 کے کامیاب انعقاد پر تمام شرکاء، آفیشلز، مقامی انتظامیہ اور سیکورٹی اداروں کو مبارکباد پیش کی ہے۔

گو کہ کورونا وائرس کے باعث ایونٹ کا پلے آف مرحلہ خالی انکلوژرز میں کھیلا گیا۔ تماشائیوں کے بغیر کھیلے گئے ان سنسنی خیز میچوں میں ان کی کمی بھی شدت سے محسوس کی گئی۔اس سے قبل ایونٹ کے تیس لیگ میچز کو کُل 6 لاکھ افراد نے اسٹیڈیم میں بیٹھ کر دیکھاتھا۔بلاشبہ ان مشکل حالات میں بھی ایچ بی ایل پی ایس ایل 2020 کا کامیاب انعقاد ایک بہت بڑی کامیابی ہے۔

ایونٹ کے فائنل میں آمنے سامنے آنی والی لاہور اور کراچی کی ٹیمیں لیگ میچز میں بھی دو مرتبہ ایک دوسرے کے مدمقابل آئی تھیں، ان دونوں میچز میں اسٹیڈیم کھچاکھچ تماشائیوں سے بھرے ہوئے تھے مگر کوویڈ 19 کی وجہ سے روایتی حریفوں کے درمیان یہ فائنل بند دروازوں میں کھیلا گیا۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین احسان مانی نے کہا کہ انہوں نے گزشتہ سال وعدہ کیا تھا کہ ایچ بی ایل پاکستان سپر لیگ 2020 اپنے آغاز سے اختتام تک پاکستان میں ہی ہوگی،ایونٹ کے تعطل کے دوران بھی انہوں نے اسی وعدے کو دہرایاتھا اورانہیں خوشی ہے کہ ہر طرح کے چیلنجز اور مسائل سے نمٹنے کے بعد وہ ملک میں کرکٹ کے مداحوں کے لیے ایک مکمل اور کامیاب ایونٹ کے انعقاد کو یقینی بناسکے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ یہ کھیل فینز کا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس کی وجہ سے نیشنل اسٹیڈیم کراچی میں لاہور اور کراچی کے مابین کھیلا گیاایونٹ کا سب سے بڑا ٹاکرا تماشائیوں کے بغیر کھیلا گیا اور ہمیں اس دوران ان کی کمی شدت سے محسوس ہوئی ، ہم یہ تصور کرسکتے ہیں کہ اگر حالات معمول پر ہوتے تو اس ایونٹ کی فاتح ٹیم اپنی جیت کا جشن تماشائیوں کے سامنے کس شاندار انداز سے مناتی۔

احسان مانی نے کہا کہ وہ ان تمام مداحوں کے مشکور ہیں جو بھرپور انداز سے ٹی وی اسکرین، لائیو اسٹریمنگ اور سماجی رابطوں کی ویب سائٹس پر متحرک رہے، ان فینز نے ایک منظم انداز سے لیگ کے برانڈ کی قدر و منزلت بڑھانے کے ساتھ ساتھ ایسے پلیٹ فارمز پر دنیا کے سامنے پاکستان کا ایک مثبت تشخص اجاگر کرنے میں بھی اپنا حصہ ڈالا۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہم ملک میں ہر لمحہ بدلتی کورونا وائرس کی صورتحال پر مکمل نظر رکھے ہوئے ہیں اور اسے پیش نظر رکھتے ہوئے ہم متعلقہ اداروں سے رابطہ کرکے کوئی ایسا حل تلاش کرنے کی کوشش کریں گے کہ جس سے آئندہ سال ایچ بی ایل پی ایس ایل اور دیگر انٹرنیشنل میچوں میں فینز کو اسٹیڈیم میں داخلے کی اجازت مل سکے۔

چیئرمین پی سی بی نے کہا کہ وہ اس موقع پر حکومت سندھ اور مقامی سیکورٹی ایجنسیز کی جانب سے بھرپور تعاون پر ان کے شکرگزار ہیں کہ جنہوں نے پاکستان کرکٹ کو ایک کامیاب ایونٹ کے انعقاد کو ممکن بنانے میں اہم کردار ادا کیا۔

احسان مانی نے کہا کہ اس دوران پی سی بی کے اسٹاف نے کورونا وائرس کی وجہ سے درپیش کئی چیلنجز کے باوجود دن رات ایک کرکے اس ایونٹ کوکامیاب بنایا، یہی نہیں ان کی انتھک محنت اور کاوش سے پاکستان کےڈومیسٹک سیزن 21-2020 کے 55 فیصد مقابلے بھی کامیاب انداز میں منعقد ہوچکے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ہم ڈومیسٹک سیزن 21-2020 کے کامیاب انعقاد کے لیے پرامید ہیں، ہم آئند سال 21-2020 کے جنوری فروری میں شیڈول اپنے فیوچر ٹور پروگرام میں شامل جنوبی افریقہ کرکٹ ٹیم کی میزبانی کے منتظر ہیں۔

چیئرمین پی سی بی نے کہا کہ وہ پلے آف میچز میں شرکت کے لیے کراچی آنے والے غیرملکی کھلاڑیوں کا شکریہ ادا کرتے ہیں ، اس سے ہم اس لیگ کی قدر کی اہمیت کا اندازہ لگا سکتے ہیں۔

احسان مانی نے کہا کہ وہ آخر میں اپنے تمام کمرشل پارٹنرز، خصوصی طور پر ایچ بی ایل ، کا شکریہ ادا کرنا چاہتے ہیں کہ جس طرح انہوں نے ہمیں اسپورٹ کیا، وہ میڈیا کے بھی شکرگزار ہیں جنہوں نے اخباروں، ٹی وی کے پرائم بلیٹنز اور اپنے ڈیجٹل پلیٹ فارمز پر لیگ کی کوریج کی۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.