fbpx

‏پیمرا نے میڈیا کو نور مقدم کی سی سی ٹی وی فوٹیج چلانے سے روک دیا

اسلام آباد :‏پیمرا نے میڈیا کو نور مقدم کی سی سی ٹی وی فوٹیج چلانے سے روک دیا،اطلاعات کے مطابق پاکستان میں الیکٹرانک میڈیا کے نگران ادارے پیمرا نے نور مقدم اور ملزم ظاہر جعفر کی سی سی ٹی وی ویڈیو میڈیا پر نشر کرنے سے روک دیا ہے۔

 

 

ذرائع کے مطابق اسی حوالے سے اتوار کو پیمرا کی جانب سے جاری ہونے والے نوٹی فکیشن میں کہا گیا ہے کہ ’پیمرا آرڈیننس 2002 کے سیکشن 27 کے تحت نور مقدم اور ظاہر جعفر کی سی سی ٹی وی فوٹیج چلانا منع ہے۔

نوٹیفیکیشن میں مزید کہا گیا ہے کہ تمام سیٹلائٹ ٹی وی چینلز کو ہدایت کی جاتی ہے کہ وہ فوری طور پر سی سی ٹی وی فوٹیج چلانا بند کر دیں، احکامات کی پابندی نہ کرنے کی صورت میں خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف سیکشن 29, 30 اور 33 کے تحت کارروائی کی جائے گی۔

 

 

یاد رہے کہ نور مقدم قتل کیس کے مرکزی ملزم ظاہر جعفر کے گھر کی سی سی ٹی وی ویڈیوز منظرعام پرآگئی ہیں

ویڈیو کے مطابق نور مقدم 18 جولائی 2021 کو رات 10 بج کر 19 منٹ پرگھر میں داخل ہوتی ہے، 19 جولائی کی رات 2 بج کر 39 منٹ پر ظاہر جعفر اور نور مقدم سامان لے کر گھر سے نکلتے دیکھا جاسکتا ہے

 

19 جولائی کو ہی رات 2 بج کر 41 منٹ پر نور مقدم ننگے پاؤں گھر سے باہر بھاگتی ہے، ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ چوکیدار نور مقدم کو باہر نہیں جانے دیتا،نورمقدم ظاہرجعفرکے خوف سے سیکورٹی گارڈ کے کیبن میں‌ چھپ جاتی ہے اوراسی دوران ظاہرجعفرکیبن کھول کرنورمقدم کوزبردستی پکڑکراپنےکمرہ خاص میں لے جاتا ہے ،

 

اس ویڈیو میں ظاہر جعفر اور نور مقدم 2 بج کر 46 منٹ پر گاڑی میں بیٹھ کر باہر جاتے ہیں اور 19 جولائی کو ہی 2 بج کر 51 منٹ پر دونوں سامان سمیت گھر واپس آجاتے ہیں۔

 

تیسری ویڈیو میں نور مقدم جان بچانےکیلئے کھڑکی سے چھلانگ لگاتی ہے، گھر کے دوسری سائیڈ سے ظاہر جعفر کو بھی چھلانگ لگاتے دیکھا جا سکتا ہے، نور مقدم باہر جانےکی کوشش کرتی ہے لیکن مالی اسے نہیں جانےدیتا جبکہ چوکیدار بیسمنٹ میں چلاجاتاہے جس کے بعد ملزم ظاہر جعفر ، نور مقدم کو گھسیٹے ہوئے گھر کے اندر لے جاتا ہے۔

 

خیال رہے کہ اسلام آباد کے تھانہ کوہسار کی حدود ایف سیون فور میں 20 مئی کو 28 سالہ لڑکی نور مقدم کو تیز دھار آلے سے قتل کیا گیا تھا۔

نور مقدم قتل کیس کا ملزم ظاہر جعفر پولیس کی تحویل میں ہے اور کیس کی سماعت اسلام آباد کی مقامی عدالت میں جاری ہے۔حکومت نے نور مقدم قتل کیس کے ملزم کا نام بلیک لسٹ میں ڈال دیا ہے جب کہ وزیرداخلہ شیخ رشید کا کہنا ہےکہ کیس کے ملزمان کو ہر صورت قانون کے کٹہرے میں لایا جائے گا۔