fbpx

سپیکر،چیئرمین سینیٹ کا پٹرول پر اٹھنے والے اخراجات پر 40 فیصد کٹوتی کا فیصلہ

سپیکر،چیئرمین سینیٹ کا پٹرول پر اٹھنے والے اخراجات پر 40 فیصد کٹوتی کا فیصلہ

اسپیکر قومی اسمبلی اور چیئرمین سینیٹ نے پٹرول پر اٹھنے والے اخراجات پر 40 فیصد کٹوتی کا فیصلہ کیا ہے

اسپیکر قومی اسمبلی راجہ پرویز اشرف اور چیئر مین سینیٹ صادق سنجرانی کی ملاقات ہوئی ہے بجٹ اور پارلیمان کے دونوں ایوانوں کے جاری اجلاسوں اور قانون سازی پر بات چیت کی گئی ،اسپیکر قومی اسمبلی راجہ پرویز اشرف کا کہنا تھا کہ ملک معاشی مشکلات سے دوچار ہے، بحران سے نکالنے کیلئے لائحہ عمل مرتب کرنا وقت کی ضرورت ہے،عوام کے نمائندے ہیں، ان کے تکلیف کو محسوس کرتے ہیں ،مشکل حالات میں کفایت شعاری کو اپنانا ناگزیر ہے،

پٹرول کی مد میں 40 فیصد کٹوتی کا اطلاق اسپیکرو ڈپٹی اسپیکر پرہوگا 40فیصد کٹوتی کا اطلاق چیئرمین و ڈپٹی چیئرمین سینیٹ و دیگر عہدیداروں پر بھی ہوگا،

پٹرول کی قیمتوں میں اضافے کے بعد تحریک انصاف کی جانب سے حکومت پر کڑی تنقید کی جا رہی ہے،اسکے باوجود کہ یہ واضح ہو چکا ہے کہ پی ٹی آئی نے ہی آئی ایم ایف کے ساتھ پٹرول مہنگا کرنے کا معاہدہ فروری میں کیا تھا.

قبل ازیں وفاقی وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل کا کہنا ہے کہ پیٹرول پرسبسڈی ناقابل برداشت ہے ،پیٹرول پرسبسڈی کے باعث ڈیفالٹ کی طرف جا رہے تھے،عمران خان نے پیٹرول پر 30روپے لیوی عائد کیا جو معاشی مشکلات ہیں وہ عمران خان کے معاہدے کے باعث ہیں،کوئلے کے پلانٹ نہیں چل رہے عوام سمجھتے ہیں کہ یہ مہنگائی اور تباہی عمران خان کی ہے، عمران خان نے فروری میں روس سے تیل کیوں نہیں لیا عمران خان کی وجہ سے مہنگائی آئی ہے، 5 ہفتے میں ختم نہیں ہوسکتی، جیسے ہی بجٹ آئے گا تو ہم مہنگائی پر قابو پانے کی کوشش کریں گے،اگست 2023 تک مدت ہے تب تک یہ اسمبلیاں چلتی رہیں گی،

پٹرول ذخیرہ کرنے والوں کوکس کی پشت پناہی حاصل ہے؟ قادر پٹیل

‏جیسا مافیا چاہتا تھا ویسا نہیں ملا ، وسیم بادامی کا پٹرول کی قیمتوں میں اضافے پر تبصرہ

ہارن بجاؤ، حکمران جگاؤ، وزیراعظم ہاؤس کے سامنے ہارن بجا کر احتجاج کا اعلان ہو گیا

وزیراعظم نے مافیا کے آگے ہتھیار ڈال دیئے،مثبت اقدام نہیں کر سکتے تو گھر جانا ہو گا، قمر زمان کائرہ

جنوری کے مقابلے میں پٹرول اب بھی 17 روپے سستا ہے،عمر ایوب کی انوکھی وضاحت