پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ممکنہ اضافہ، ہائیکورٹ میں درخواست دائر

0
12

پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ممکنہ اضافے کو عدالت مین چیلنج کر دیا گیا

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق لاہور ہائیکورٹ میں درخواست دائر کی گئی ہے جس میں موقف اپنایا گیا ہے کہ عالمی مارکیٹ میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافنہ نہیں ہوا اس کے باوجود پاکستان میں قیمتوں میں اضافہ کر دیا گیا جو آئین کے آرٹیکل 9، 14 اور 15 کی خلاف ورزی ہے، درخواست میں وفاقی حکومت اور وزارت پٹرولیم کو فریق بنایا گیا ہے، درخواست گزار نے عدالت سے استدعا کی کہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ کا حکم کالعدم قرار دیا جائے۔

واضح رہے کہ ای سی سی نے پٹرول کی قیمت میں 9.35 روپے، ڈیزل کی قیمت میں 4 روپے، ہائی اسپیڈ ‏ڈیزل 4 روپے 89 پیسے، ‏لائٹ ڈیزل 6 روپے 40 پیسے، ‏مٹی کا تیل 7 روپے 46 پیسے فی لٹر مہنگا کرنیکی منظوری دی۔ نئی قیمتوں کا اطلاق 7 مئی منگل کو کابینہ اجلاس میں منظوری کے بعد ہوگا۔ منظوری ملنے کے بعد پٹرول کی نئی قیمت 108 روپے فی لٹر ہو گی۔

قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف شہباز شریف نے کہا کہ تحریک انصاف کی حکومت اپنی نااہلی کا بوجھ غریب عوام پر ڈال رہی ہے، رمضان المبارک سے قبل پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ غریب عوام پر ظلم اور بے حسی کی انتہا ہے. شہباز شریف نے مزید کہا کہ ریاست مدینہ بنانے والوں نے رمضان المبارک کے مقدس ماہ کا بھی خیال نہیں کیا، اب مہنگائی کا طوفان آئے گا.

Leave a reply