پلوامہ حملہ،عسکریت پسندوں نے کہاں سے منگوایا تھا حملے کیلئے سامان؟ بھارت کا نیا انکشاف

پلوامہ حملہ،عسکریت پسندوں نے کہاں سے منگوایا تھا حملے کیلئے سامان؟ بھارت کا نیا انکشاف

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق مقبوضہ کشمیر کے علاقے پلوامہ میں گزشتہ برس 14 فروری 2019 کو ہونے والے پلوامہ حملے کو ابھی تک بھارت نہیں بھلا سکا، پلوامہ حملے کے حوالہ سے بھارت نے اب نیا انکشاف کیا ہے، اس حملے میں سی آ رپی آیف کے 40 اہلکار ہلاک ہو گئے تھے

پلوامہ حملہ کیسے کیا گیا اس حوالہ سے بھارتی ادارے ابھی تک تحقیقات کر رہے ہیں اگرچہ بھارتی اپوزیشن جماعتیں کئی بار یہ کہہ چکی ہیں کہ پلوامہ حملہ مودی نے الیکشن جیتنے کے لئے کروایا ، اس حملے کے لئے ایک نئی رپورٹ سامنے آئی ہے حملے میں استعمال ہونے والے بارود کی تحقیقات کرنے والے ماہرین نے دعویٰ کیا ہے کہ پلوامہ حملہ پوری منصوبہ بندی کے ساتھ کیا گیا

بھارتی اخبار ہندوستان ٹائمز میں شائع ہونے والی رپورٹ کے مطابق تحقیقات کرنے والے افسران کا کہنا تھا کہ عسکریت پسندوں نے بم بنانے کے لئے سامان کو چوری کیا تھا، عسکریت پسندوں نے پتھر کے خزانوں سے تقریبا پانچ سو جلیٹن چھڑے چوری کی تھیں۔ اس کے ساتھ ہی انہوں نے امونیم نائٹریٹ اور امونیم پاؤڈر کو آس پاس کی دکانوں سے تھوڑی تھوڑی مقدار میں خریدا اسی وجہ سے کسی کو ان پر شک نہیں ہوا،

بھارتی تحقیقاتی افسران نے پاکستان کے خلاف ہرزہ سرائی کرتے ہوئے کہا کہ عسکریت پسندوں نے پلوامہ حملے کے لئے بڑی مقدار میں آر ڈی ایکس پاکستان سے منگوایا تھا

حکام کا کہنا تھا کہ پلوامہ حملہ کرنے والے محمد کمانڈر مدثر احمد خان،اوراسماعیل بھائی عرف لمبو ، سمیر احمد ڈار ، شاکر بشیر ماگرے نے کھدانوں سے اور کھیو (پلوامہ)، خنم (سرینگر)، ترال اونتی پورہ اور لیفٹ پورہ علاقوں میں چٹانوں کو توڑنے والی کمپنی میں استعمال ہونے والی جیلیٹن کی چھڑوں کو چوری کیا تھا جو حملے میں استعمال ہوئیں

جیلٹین چھیڑا جس میں نائٹروگلسرین ہوتا ہے۔ اسے خفیہ ایجنسیوں سے بچانے کے لئے 5 کلو اور 10 کلوگرام کی مقدار میں جمع کیا گیا تھا۔ امونیم نائٹریٹ تقریبا 70 70 کلوگرام اور امونیم پاؤڈر مقامی مارکیٹ سے خریدا گیا تھا،

بھارتی فوج کے کرنل نے کی سیاچین میں خودکشی

بھارت کشمیر میں ہار گیا، اب کشمیری سنگبازوں کا مقابلہ کریں گے روبوٹ

بھارت کی پاکستان کے خلاف ہرزہ سرائی، کہا سرحد پار سے عسکریت پسند آ رہے ہیں

کشمیر میں رواں برس بھارتی فوجیوں کی ہلاکت میں اضافے سے مودی سرکار پریشان

پلوامہ حملے میں استعمال ہونیوالی گاڑی کے مالک کو کیا بھارتی فوج نے شہید

پاکستان حملہ کر دے گا، بھارتی فضائیہ کو کہاں لگا دیا گیا جان کر ہوں حیران

ہر سال 27 فروری کو آپریشن سوفٹ ریٹارٹ منایا جائے گا، پاک فضائیہ

پلوامہ حملہ مودی کی سازش تھی، گجرات کے وزیر اعلیٰ بھی بول پڑے

پلوامہ حملے کی تحقیقات کرنے والے فرانزک ماہرین پہلے ہی اس بات کی تصدیق کر چکے ہیں کہ اس حملے میں‌ امونیم نائٹریٹ ، نائٹرو گلسرین اور آر ڈی ایکس استعمال ہوئے تھے۔ پلوامہ حملے کے فورا بعد ہی تمام شواہد اکٹھے کرلئے تھے۔ دھماکہ خیز مواد کو کس طرح جمع کیا گیا اور اس کی ڈلیوری کے پیچھے کون تھے اس پر تحقیقات کی گئی ہیں

واضح رہے کہ پلوامہ حملے میں چالیس سے زائد بھارتی فوج ہلاک ہو گئے تھے، جس کا الزام بھارت نے پاکستان پر لگایا تھا اور بھارت نے بالا کوٹ میں سرجیکل سٹرائیک کی ناکام کوشش تھی. 27 فروری کو بھارت کے دو طیارے پاک فضائیہ نے گرائے تھے. پلوامہ حملے کے بعد بھارت کے طیارے بالا کوٹ پے رول گرا کر فرار ہو گئے تھے جس کے بعد اگلے روز پاکستان نے بھارت کے دو طیارے مار گرائےتھے اور بھارتی پائلٹ ابھی نندن کو گرفتار کر لیا تھا جسے پاکستان کے وزیراعظم عمران خان نے رہا کرنے کا اعلان کیا تھا

پلوامہ،لشکر سے وابستہ عسکریت پسندوں کی 5 بار نماز جنازہ ادا،دوسرے روز بھی مکمل ہڑتال

مقبوضہ کشمیر، شہداء کے جنازوں کو عسکریت پسندوں کی سلامی، بھارتی فوج دیکھتی رہ گئی

پلوامہ حملے میں ہلاک بھارتی فوجی کی اہلیہ کو کس کام کے لیے مجبور کیا جانے لگا؟

پلوامہ حملے کے لئے کیمیکل کہاں سے خریدا گیا؟ تحقیقاتی ادارے کے انکشاف پرکھلبلی مچ گئی

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.