fbpx

اسلاموفوبیاکےخلاف وزیراعظم کی حکمت عملی پھل دینے لگی:امریکی ایوان نمائندگان نے کام کردکھایا

اسلام آباد/واشنگٹن:اسلاموفوبیا کےخلاف وزیراعظم عمران خان کی حکمت عملی پھل دینے لگی:امریکی ایوان نمائندگان نے کام کردکھایا ,اطلاعات کے مطابق امریکہ اوردیگرمغربی ملکوں اورایسے ہی یورپین ملکوں میں اسلام فوبیا کے آگے بندھ باندھنے کے لیے جوحکمت عملی وزیراعظم عمران خان نے قوم کےسامنے رکھی تھی اس کے ثمرات آنا شروع ہوگئے ہیں ،

اس حوالے سے واشنگٹن سے تازہ ترین اطلاعات میں بتایا گیا ہےکہ امریکی ایوان نمائندگان نے غیر امریکیوں کے ساتھ قومیت کی بنیاد پر تعصب کو روکنے کے لیے (نو بین) ایکٹ منظور کرلیا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے انادولو کی رپورٹ کے مطابق ایوان نمائندگان میں اس بل کو 218-208 ووٹوں سے منظور کیا گیا ہے جس کی حمایت صرف ایک ریپبلکن نے کی ہے۔

اس بل کے تحت امریکی صدر کے غیر ملکیوں کو امریکا میں داخلے سے روکنے یا ان پر پابندی عائد کرنے کے اختیار کو ختم کردیا جائے گا

اس پابندی کا سب سے زیادہ اثرمسلمانوں پرتھا جس پروزیراعظم عمران خان نے ڈونلڈ ٹرمپ کے ساتھ نظرثانی کا مشورہ بھی دیا تھا

اس کے علاوہ یہ بل امیگریشن سے متعلق مختلف فیصلوں میں مذہبی امتیازی سلوک سے بھی روکے گا جیسا کہ تارکین وطن یا غیر تارکین وطن کو ویزا جاری کرنا۔

سابق صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے مسلمانوں کے خلاف پابندی کے جواب میں ڈیموکریٹس کے نمائندے جوڈی چو نے ‘نو بین ایکٹ’ متعارف کرایا۔ووٹ سے قبل ایوان زیریں میں اپنی تقریر میں جوڈی چو نے مسلمانوں کے خلاف پابندی کو ‘غلط، غیر ضروری اور ظالمانہ’ قرار دیا۔

انہوں نے کہا کہ ‘آج ہم یہ یقینی بناسکتے ہیں کہ دوبارہ کبھی ایسا نہ ہو، یہ پالیسی غلط تھی، امریکا لوگوں کے مذہب کی وجہ سے ان پر پابندی عائد نہیں کرتا اور سپریم کورٹ نے بھی اس بات کا اعتراف کیا تھا’۔اس بل پر قانون سازی اگلے مرحلے میں سینیٹ میں منظوری کے لیے پیش کی جائے گی۔

امریکن اسلامک ریلیشنز کونسل (سی اے آئی آر) نے اس ایکٹ کی منظوری کا خیرمقدم کیا اور اس اقدام پر تیزی سے عمل درآمد پر جوڈی چو اور ایوان کے ڈیموکریٹک قیادت کا شکریہ ادا کیا۔

واضح رہے کہ جنوری 2017 میں ڈونلڈ ٹرمپ نے صدر کا عہدہ سنبھالنے کے پہلے ماہ کے دوران سات مسلم اکثریتی ممالک سے سفر پر پابندی عائد کی تھی

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.