ورلڈ ہیڈر ایڈ

وزیراعظم عمران خان کا سعودی ولی عہد سے رابطہ، تیل تنصیبات پر حملوں کی مذمت

وزیر اعظم عمران خان نے سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان سے ٹیلیفونک رابطہ کیا اور سعودی عرب میں تیل کی تنصیبات پر حملے کی مذمت کی۔

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان سے رابطہ کیا ہے اور تیل تنصیبات پر حملوں کی مذمت کی ہے،. وزیراعظم عمران خان نے تخریبی کاروائیوں کے خلاف سعودی عرب کی مکمل حمایت اور ساتھ دینے کا اعلان کیا ہے، وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ سعودی عرب کےامن اورعالمی معیشت کونشانہ بنانےکی ہرکوشش سےمقابلہ کیاجائےگا

ترجمان دفتر خارجہ نے کہا ہے کہ پاکستان نے سعودی عرب میں آئل پمپنگ اسٹیشن پرڈرون حملے کی شدید مذمت کی ہے ،ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ پاکستان توقع کرتا ہے اس قسم کے حملے نہیں دہرائے جائیں گے ،پاکستان موجودہ حالات میں سعودی عرب کے ساتھ مکمل ہمدردی اور حمایت کرتا ہے ،اس قسم کے حملے جس سے تجارتی سرگرمیوں میں تعطل اور خوف پیدا ہو معاف نہیں کئے جا سکتے ،پاکستان سعودی عرب کے امن و سلامتی میں ساتھ کھڑا ہے

سعودی عرب میں آرامکو کے زیرانتظام تیل کی دو بڑی تنصیبات پر ہوئے ڈرون حملوں سے آگ لگ گئی۔

حوثی باغیوں کے ریاض میں فوجی ٹھکانے پر متعدد ڈرون حملے

سعودی وزارت داخلہ کے ترجمان کے حوالے سے سرکاری سعودی ایجنسی نے کہا کہ ابقیق میں جس تنصیبات پر آگ لگی وہ تیل کا سب سے بڑا پروسیسنگ پلانٹ ہے۔

ترجمان کے مطابق “صبح 4 بجے ارامکو کی صنعتی سیکیورٹی ٹیموں نے … ڈرون کے نتیجے میں اباق اور خورس میں دو تنصیبات پر لگی آگ سے نمٹنے کے لیے کارروائی کا آغاز کیا۔”

وزارت نے نہ تو حملے کے ذریعہ کی شناخت کی اور نہ ہی یہ واضح کیا کہ کوئی جانی نقصان ہوا کہ نہیں۔ وزارت کے مطابق ابھی تحقیقات جاری ہیں۔

حوثی باغیوں کا سعودی فوجی ہیڈکوارٹر پر میزائل حملہ کا دعوی

یمن کے حوثی باغیوں نے ڈرون حملوں کی ذمہ داری قبول کر تے ہوئے کہا ہے کہ یہ حملے دس ڈرونز کے ذریعے کیے گئے۔ حوثی باغیوں کے ترجمان یحییٰ ساڑی نے ایک بیان میں کہا کہ یہ حملے ہمارا حق ہیں ، اور ہم سعودیوں کو خبردار کرتے ہیں کہ ہمارے اہداف میں اضافہ ہوتا رہے گا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.