کراچی کے تاجروں کی بھارت سے تعلقات بہتر کرنے اور عمران خان سے بات چیت کی تجویز

0
160
cm sindh

شہر قائد کراچی کے دورے کے دوران تاجروں نے وزیراعظم شہباز شریف کو بھارت سے تعلقات بہتر کرنے اور عمران خان سے بات چیت کی تجویز دے دی

وزیر اعظم شہباز شریف نے کراچی میں کاروباری شخصیات سے خطاب کیا اور کہا کہ اس سے غرض نہیں ہونی چاہیے کہ کس صوبے میں کس کی حکومت ہے، ذاتی پسند و ناپسند سے بالاتر ہوکر پاکستان کے مفاد کےلیے اکٹھے ہوجائیں، ہم سب کو مل کر مسائل کا حل نکالنا ہے، اگلے 5سال کا تہیہ کرلیں کہ برآمدات کو دُگنا کریں گے، چیلنجوں کو سمجھیں کہ انہیں کس طرح حل کرنا ہے، پاکستان کا کھویا ہوا مقام کس طرح واپس لانا ہے،

اس موقع پر تاجروں نے وزیراعظم شہباز شریف کو مختلف تجاویز بھی دیں،۔حبیب بینک اور حبیب گروپ کے مالک عارف حبیب نے وزیراعظم شہباز شریف کو مشورہ دیا کہ بھارت سمیت تمام پڑوسی ممالک سے تعلقات بہتر بنائے جائیں وہیں،اڈیالہ جیل میں قید سابق وزیراعظم عمران خان سے بھی بات چیت کی جائے،عارف حبیب کا کہنا تھا کہ اڈیالہ جیل کے باسی سے ہاتھ ملائیں۔اس سے حالات میں بہتری آئے گی

وفاق نے سندھ کو نظر اندازکیا، وزیراعظم سے وزیراعلیٰ کا شکوہ
وزیراعظم شہباز شریف کے دورہ کراچی کے دوران وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے وزیراعظم شہباز شریف سے شکوے کر دیئے، وزیراعلیٰ سندھ کا کہنا تھا کہ وفاق کی جانب سے سندھ کو نظر انداز کیا گیا ہے-

وزیراعظم شہباز شریف کی صدارت وزیراعلیٰ ہاؤس میں اجلاس ہوا جس میں وزیراعلیٰ سندھ اور صوبائی کابینہ کے ارکان سمیت وفاقی وزیر احسن اقبال، خالد مقبول، مصدق ملک، جام کمال، اور عطااللہ تارڑ نے شرکت کی ، اس موقع پر وزیراعلیٰ سندھ نے شہباز شریف کو وزیراعظم منتخب ہونے پر مبارکباد دی،اجلاس کے دوران وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کا کہنا تھا کہ وزیراعظم کی کابینہ میں بھی سندھ کی نمائندگی زیادہ ہے، وزیر خزانہ محمد اورنگزیب، جام کمال اور قیصر شیخ کراچی میں رہتے ہیں، خالد مقبول تو کراچی کے ہی ہیں، سمجھتا ہوں اب سندھ کے مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل ہوں گے” وزیراعظم بڑے مسائل جلد حل کرنے کی بھرپورصلاحیت رکھتے ہیں”۔

وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے وزیراعظم کو بریفنگ دی ، بریفنگ میں بتایا گیا کہ کہ 2022 کے سیلاب نے تباہی پھیلائی تھی، سیلاب کی تباہ کاریوں کے بعد تعمیر نو کا مرحلہ شروع ہوا اور اتفاق ہوا تھا 70فیصد فنڈ ڈونر ایجنسیز فراہم کریں گے، 30فیصد فنڈنگ وفاقی اور سندھ حکومت مہیا کریں گی، ڈونر ایجنسیز نے 557.79 ارب روپے دیے، سیلاب متاثرین کے گھروں کی تعمیر 50 کروڑ ڈالر کا پراجیکٹ ہے، اسکولوں کی تعمیر کا پراجیکٹ 11ہزار917ملین روپے کا ہے،سندھ حکومت نے 25 ارب روپے جاری کیے، وفاق نے فنڈ نہیں دیے جب کہ گزشتہ 4سال نئی اسکیمز میں وفاق نے سندھ کو نظر انداز کیا –

وزیراعظم نے مراد علی شاہ کو تمام مسائل مل بیٹھ کر حل کرنے کی یقین دہانی کروائی،اس موقع پر شہباز شریف نے کہا کہ ہم مل جل کر عوام کے مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کریں گے،وزیراعلیٰ سندھ نے پریزنٹیشن کی مدد سے وزیراعظم کو مالی مسائل سے آگاہ کیا۔ شہباز شریف نے وزیراعلیٰ کی کارکردگی کو سراہنے کے لیے اجلاس میں تالیاں بجوائیں،اس موقع پر وزیر اعظم نے سندھ میں تین سو بسوں کے پول میں ایک سو پچاس بسیں دینے کا اعلان کیا-

جمہوری ترقی کی گاڑی کو آگے بڑھانے کیلئے ناپسند فیصلے بھی کرنے پڑیں گے،وزیراعظم
بعد ازں وزیراعلیٰ ہاؤس سندھ میں میڈیا نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے شہباز شریف کا کہنا تھا کہ جمہوری ترقی کی گاڑی کو آگے بڑھانے کیلئے ناپسند فیصلے بھی کرنے پڑیں گے 8 فروری کے الیکشن کے نتیجے میں وفاق میں منقسم مینڈیٹ ملا، ہم سب کو ایک دوسرے کا ساتھ دینا ہو گا تاکہ عوام کے مسائل حل کر سکیں، وزیر اعلیٰ مراد علی شاہ سے بھائیوں والا تعلق بن گیا ہے، دوست اور بھائی کی طرح آپ کی ہرکال پر تیار ہوں، صوبوں کی ترقی پاکستان کی ترقی ہے، میرا فرض ہے اس حکومتی اتحاد کو مزید مضبوط بناؤں، آنے والے ہفتوں اور مہینوں میں مزید ممالک کے وفود پاکستان آئیں گے، صوبے اور وفاق مل کر کام کریں گے تو سرمایہ کاری آئے گی، جمہوری ترقی کی گاڑی آگے بڑھے اس کیلئے ناپسند فیصلے بھی کرنے پڑیں گے۔

قبل ازیں وزیراعظم شہباز شریف ایک روزہ دورے پر کراچی پہنچ گئے،گورنر سندھ کامران ٹیسوری نے وزیراعظم شہباز شریف کا کراچی پہنچنے پر استقبال کیا،وزارت عظمیٰ کا منصب سنبھالنے کے بعد وزیراعظم شہباز شریف کا یہ کراچی کا پہلا دورہ ہے،وزیراعظم شہبازشریف مزارِ قائد پہنچ گئے۔انہوں نے فاتحہ پڑھنے کے بعد ملک کی ترقی و خوشحالی کے لیے دعا کی۔

ترجمان وزیر اعظم ہاؤس کے مطابق وزیراعظم شہباز شریف کاروباری برادری اور کراچی چیمبر آف کامرس کے وفد سے ملاقات بھی کریں گے،شہباز شریف کراچی میں کاروباری برادری سے ملکی معیشت کی بہتری کیلئے تجاویز بھی لیں گے۔ایک روزہ دورے کے دوران وزیراعظم گورنر ہاؤس بھی جائیں گے جہاں گورنر سندھ کامران ٹیسوری سے ان کی ملاقات شیڈول کا حصہ ہے ۔کراچی کے دورے کے دوران شہباز شریف کی متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) پاکستان سے ملاقات بھی متوقع ہے،وزیراعظم کے دورہ کراچی کے باعث وفاقی کابینہ اجلاس ملتوی کر دیا گیا ہے۔

Leave a reply