حکومت کا ایک برس، وزیراعظم نے کس کے راستے کو چنا، فردوس عاشق اعوان نے بتا دیا

وزیراعظم عمران خان کی معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ حکومت کے لئے کفایت شعاری اورخود انحصاری کا راستہ مشکل ترین تھا، لیکن وزیراعظم نےقائداعظم کے سپاہی کے طورپر تنقید کا سامنا کرتے ہوئے بھی مخالفین کے اندازوں کوغلط ثابت کر دیا

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق فردوس عاشق اعوان نے نعیم الحق کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ ایک سال میں نئے پاکستان کی تکمیل کی اس کے باوجود بدترین تنقید کا سامنا کرنا پڑا ،ہم سب میڈیا کےذریعے عوام کو جوابدہ ہیں، چند افراد اور ایلیٹ کلاس عوام کے حقوق چھینتے رہے۔ ہر ادارے میں اصلاحات کی ضرورت تھی، عمران خان نے ہر ادارے میں ریفارمز متعارف کرائیں۔ ریلوے خسارے میں ملا، انتھک محنت سے پاؤں پر کھڑا کیا۔ انصاف اور احساس تک معاشرے میں تبدیلی نہیں آ سکتی، احساس پروگرام کیلئے 152 ارب روپے مختص کیے ہیں.

فردوس عاشق اعوان کا مزید کہنا تھا کہ میڈیا کی آزادی اور مثبت تنقید کو خوش آمدید کہتے ہیں کیونکہ حکومت آزادی اظہار رائے پر مکمل یقین رکھتی ہے، حکومت نے ایک سال میں محنت، دیانتدار اور درست سمت میں پالیسیوں کا آغاز کیا، پالیسیوں کا ثمر عوام کی ترقی و خوشحالی کی صورت میں سامنے آئے گا، نئے پاکستان میں حکمران طبقے کے نہیں بلکہ عوامی مفادات کا تحفظ ہوتا ہے، وزیراعظم عمران خان محنت اور عزم سے قائداعظم کے پاکستان کو آگے لے کر جا رہے ہیں، حکومت کا ایک سال استحکام پاکستان کا سفر ہے جبکہ آئندہ سال تعمیر پاکستان کا سال ہو گا، وزیراعظم تمام شعبوں میں اصلاحات کے عمل کی خود نگرانی کر رہے ہیں، ملک کے متوسط طبقے کی فلاح کے لئے احساس پروگرام شروع کیا گیا، غریبوں کے لئے تمام اقدامات احساس پروگرام کے تحت کئے جا رہے ہیں،

فردوس عاشق اعوان کا مزید کہنا تھا کہ خزانہ و اقتصادی امور ڈویژن اور ریلوے کی کارکردگی میں نمایاں بہتری آئی، پاکستان پوسٹ اور این ایچ اے بہترین کارکردگی کے باعث منافع بخش ادارے بن گئے، وزارت توانائی نے گردشی قرضوں میں نمایاں کمی کی ہے، ملک میں سیاحت کے فروغ کے لئے 175 ملکوں کے لئے آسان ویزہ پالیسی متعارف کرائی گئی ہے ، ایف بی آر نے ٹیکس کے دائرہ کار کو وسیع کرنے کے لئے بھی جامع اقدامات کئے ہیں،

فردوس عاشق اعوان نے مزید کہا کہ پی ٹی وی اب خسارے سے نکل کر منافع بخش ادارہ بن گیا ہے، ریڈیو کو بھی خسارے سے نکال کر کامیاب ادارہ بنائیں گے، ریڈیو کو حقیقی طور پر پاکستانی عوام کی آواز بنائیں گے، اے پی پی ویڈیو نیوز سروس کو جدید تقاضوں سے ہم آہنگ کر رہے ہیں تا کہ پوری دنیا میں ملک کے مثبت تشخص کو اجاگر کیا جا سکے۔

وزیراعظم کی مشیر برائے اطلاعات کا مزید کہنا تھا کہ درخت نہ صرف انسانوں کو سایہ فراہم کر کے تپتی دھوپ اور گرمی سے بچاتے ہیں بلکہ ہماری آنے والی نسلوں کو ماحولیاتی آلودگی سے بچانے کے لئے اہم کردار ادا کرتے ہیں، درخت لگانا نہ صرف صدقہ جاریہ ہے بلکہ یہ سنت نبوی بھی ہے، پاکستانی اپنے گھروں، محلوں اور شہروں میں زیادہ سے زیادہ پودے لگائیں۔

انہوں نے مختلف محکموں کی کارکردگی بیان کرتے ہوئے کہا کہ 175 ممالک کیلئے آسان ویزہ پالیسی متعارف کرائی گئی، اسمگلنگ کی روک تھام کیلئے وزارت داخلہ نے مربوط اقدامات کیے۔ وزارت اطلاعات میں سوشل میڈیا کا ونگ قائم کیا گیا ہے، وزارت خارجہ نے بھارت کی تمام سفاکانہ کارروائیاں ناکام بنائیں۔ آخر میں انھوں نے اپوزیشن کا شکریہ ادا کیا جنہوں نے کشمیر کے معاملے پر حکومت کے قومی بیانیے کو سپورٹ کیا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.