fbpx

‏بریکنگ نیوز، پولیس حماد اظہر کو گرفتار کرنے ان کے گھر پہنچ گئی

پولیس پی ٹی آئی رہنما حماد اظہر کو گرفتار کرنے ان کے گھر پہنچ گئی-

باغی ٹی وی : سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے ٹوئٹ میں حماد اظہر نے بتایا کہ پولیس مجھے اور دوسرے کارکنوں کو گرفتار کرنے کے لیے میرے گھر کے باہر آگئی ہے-

لال حویلی کے باہر سرکاری نمبر پلیٹ کی گاڑیاں، شیخ رشید ڈر گئے

دوسری جانب پی ٹی آئی رہنما فرخ حبیب کا کہنا ہے کہ حکومت کی جانب سے پاکستان تحریک انصاف کے لیڈرز اور کارکنان کےگھروں پر چھاپے اور گرفتاریاں کی جارہی ہیں چار دیواری کا تقدس پامال کیا جا رہا ہے مگر یہ یاد رکھیں کہ حقیقی آزادی مارچ اب رکنے والا نہیں ہے۔

واضح رہے کہ اس سے قبل شیخ رشید احمد نے ویڈیو پیغام میں کہا تھا کہ سرکاری نمبر پلیٹ والی چار گاڑیوں میں سفید کپڑوں میں ملبوس پولیس اہلکار میرے گھر کے باہر مجھے گرفتار کرنے آگئے ہیں۔ میں گھبرانے والا نہیں، پنڈی کے لوگ، پاکستان کے لوگ میرے ساتھ کھڑے ہیں، لال حویلی سے ہم لانگ مارچ کے لئے نکلیں گے، چار گاڑیاں کھڑی ہیں لال حویلی کے باہر-

میں کسی بھی معاملے کے فوجی حل پر یقین نہیں رکھتا،چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان

انہوں نے امید ظاہر کی تھی کہ میں گرفتار نہیں ہوں گا، اللہ بہتر کرے گا، میں 25 مئی دن دو بجے لال حویلی سے نکلوں گا، میں ڈرنے والا نہیں ہوں، اللہ کی مدد پر یقین رکھتا ہوں۔

واضح رہے کہ پی ٹی آئی رہنماؤں کی جانب سے یہ بیانات ایسے وقت پر سامنے آ رہے ہیں جب پشاورمیں پی ٹی آئی کی کور کمیٹی کے اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ 25 مئی کو اسلام آباد کی جانب مارچ کیا جائے گا جس کے بعد فواد چوہدری نے انکشاف کیا کہ حکومت مارچ روکنے کے لیے 700 سے زائد پی ٹی آئی کے قائدین اور ورکرز کو گرفتار کرنے کا منصوبہ بنا رہی ہے۔

خیال رہے کہ پی ٹی آئی نے فوری مگر شفاف انتخابات کا مطالبہ کیا ہے اور اس مقصد کی تکمیل کے لیے 25 مئی کو اسلام آباد کی جانب مارچ کرے گی۔ مارچ کے پیش نظر حکومت نے بھی کمر کس لی اور ڈی چوک کے اطراف کے مقامات کو سیل کردیا ہے-

حکومت کا پی ٹی آئی قائدین اور ورکرز سمیت 700 لوگوں کو گرفتار کرنے کا منصوبہ…