fbpx

پی پی167،پی ٹی آئی کا ن لیگ کے دفتر پر دھاوا،توڑ پھوڑ،2 کارکن زخمی

لاہور حلقہ پی پی 167 میں کئی افراد نے مسلم لیگ ن کےدفترپردھاوابول دیا اور توڑپھوڑکی۔

ضمنی الیکشن، انتخابی مہم کا آج آخری دن،لاہور، بھکراورملتان میں رینجرز تعینات کرنے کا فیصلہ

مسلم لیگ ن کے امیدوار نذیر چوہان نے واقعے سے متعلق بتایا کہ 8 سے 10 افراد نےہمدرد چوک کے قریب دفترکو نشانہ بنایا، واقعے میں 2 کارکن زخمی بھی ہوئے جبکہ مسلم لیگ ن کے ایم پی اے خواجہ عمران نزیر نےحملے میں پی ٹی آئی کو ملوث قرار دیا ہے.

قبل ازیں بھی لاہور میں صوبائی اسمبلی کے حلقہ پی پی167 پر ضمنی انتخاب کی مہم کے دوران مسلم لیگ ن اور پاکستان تحریک انصاف کے کارکن آمنے سامنے آگئے تھے. پی ٹی آئی کے امیدوار شبیرگجر نے لیگی امیدوار پر تحریک انصاف کے دفتر پر حملےکا الزام لگایا تھا.

 

ضمنی الیکشن میں حکومتی مداخلت،عدالت نے یاسمین راشد کی درخواست نمٹا دی

 

شبیرگجرکا کہنا تھا کہ ن لیگی امیدوار نذیر چوہان نے مسلح گارڈزاور پولیس کے ہمراہ دھاوا بولا، لیگی امیدوار رات 2 بجے مسلح ساتھیوں کے ہمراہ دفتر سے پینا فلیکس اتارنے آئے، ان کے ہمراہ ڈولفن فورس اورپولیس اہلکاربھی تھے۔شبیرگجر نے الزام لگایا تھا کہ مسلح افراد نے فائرنگ کی جس سے ان کا بھتیجا زخمی ہوگیا جو اسپتال میں زیرعلاج ہے۔ انہوں نے پولیس پر واقعےکی ایف آئی آر درج نہ کرنےکا بھی الزام لگایا تھا۔

دوسری جانب امیدوارمسلم لیگ ن نذیر چوہان نے الزام لگایا ہےکہ انتخابی مہم کے بعد گھر جاتے ہوئے ان کی گاڑی پر فائرنگ کی گئی۔ نذیر چوہان کا کہنا تھا کہ فائرنگ سے میری گاڑی کو نقصان پہنچا، فائرنگ پی ٹی آئی کے شبیرگجر، خالد گجراوران کے ساتھیوں نےکی۔