fbpx

پیپلزپارٹی نے جوحمایت حاصل کی وہ اصولی طور پر غلط ہے،رانا ثناء اللہ

پیپلزپارٹی نے جوحمایت حاصل کی وہ اصولی طور پر غلط ہے،رانا ثناء اللہ

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق انسداد منشیات عدالت لاہورمیں رانا ثناء اللہ اوردیگر کے خلاف کیس کی سماعت 17مئی تک ملتوی کر دی گئی

ن لیگی رکن قومی اسمبلی رانا ثناء اللہ عدالت میں پیش ہوئے،جج شاکر حسین کی ٹرانسفر کے باعث آج رانا ثنااللہ سمیت دیگر پر فرد جرم عائد نہیں ہو سکی ،اب آئندہ سماعت 17 مئی کو ہو گی،

مسلم لیگ ن کے رکن قومی اسمبلی رانا ثناء اللہ نے عدالت پیشی کے موقع پر کہا کہ ہم حکومتی انتقامی کارروائیوں کا حصہ نہیں بننا چاہتے ،یہاں پر کوئی کام کرنے کو تیار نہیں ،مخالفین کو ہرطرح سے نشانہ بنایا جارہاہے،سپریم کورٹ کا فیصلہ حکومت کی تابوت میں آخری کیل ثابت ہوگا،یہ ووٹ چوری کرکے خود واویلا کرتے ہیں،20 پریذائیڈنگ افسران جس فارم ہاوَس میں رکھے گئے اس کے مالک کوگرفتارکیا جائے،آئین کی عملداری کےبغیر ملک آگے نہیں بڑھ سکتا،دھکے اس لیے کھا رہے ہیں کہ آئین اور قانون کی عملداری نہیں،ووٹ کی عزت کے بغیر یہ ملک آگے نہیں بڑھ سکتا،ووٹ چوری میں پنجاب اور مرکزی حکومت ملوث ہے،پی ڈی ایم ووٹ چور کے خلاف متحد ہے،پی ڈی ایم حکومت کے خلاف جدوجہد جاری رکھے گی،پیپلزپارٹی کی رائے کا احترام کرتے ہیں پیپلزپارٹی نے جوحمایت حاصل کی وہ اصولی طور پر غلط ہے،

رانا ثناء اللہ کی ضمانت منظور، رانا کی اہلیہ اور ن لیگی رہنماؤں نے بڑے سوالات اٹھا دیئے

رانا ثناء اللہ ایک بار پھرمشکل میں پھنس گئے، حکومت نے اب کیا کیا؟ جان کر ہوں حیران

رانا ثناء اللہ نے سینئر صحافی و اینکر پرسن مبشر لقمان کوجیل سے لکھا خط، کیا کہا؟

رانا ثناء اللہ کی ضمانت، شہر یار آفریدی میدان میں آ گئے، بڑا اعلان کر دیا

منشیات کیس، رانا ثناء اللہ پر کب ہو گی فرد جرم عائد؟

نیب کو مکمل اعداد وشمار کے ساتھ دستاویزات پیش کرنے سے قاصر ہوں،رانا ثناء اللہ

انسداد منشیات فورس نے(اے این ایف) نے مسلم لیگ ن کے رہنما رانا ثناءاللہ کو یکم جولائی 2019 کو منشیات اسمگلنگ کیس میں گرفتار کیا تھا۔ راناثنا کا موقف ہے کہ ان کے خلاف جھوٹا مقدمہ درج کیا گیا جبکہ منشیات برآمدگی کے ثبوت بھی عدالت میں پیش نہیں کیے گئے۔

اے این ایف حکام کے مطابق رانا ثنا اللہ کی گاڑی سے منشیات کی بھاری مقدار برآمد ہوئی اور کے خلاف نارکوٹکس ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کیا گیا۔ انسداد منشیات فورس کے ذرائع کے مطابق منشیات کے اسمگلر نے تفتیش میں ن لیگی رہنما کا نام لیا تھا۔

رانا ثناء اللہ کی لاہور ہائیکورٹ نے ضمانت کی درخواست منظور کی تھی،جس کے بعد سپریم کورٹ میں راناثنااللہ کی ضمانت منسوخی کی درخواست دائرکر دی گئی،راناثنااللہ کی ضمانت منسوخی کی درخواست نےاے این ایف نےدائر کی،ضمانت منسوخی کی درخواست 17 صفحات پر مشتمل ہے ،

واضح رہے کہ منشیات کیس میں رانا ثناء اللہ چھ ماہ کے بعد رہا ہوئے تھے ،منشیات کیس میں رہائی پانے والے رکن قومی اسمبلی ،مسلم لیگ ن پنجاب کے صدر رانا ثنا اللہ نے کہا ہے کہ اس مقدمے کا کوئی سر اور پاؤں نہیں ہے۔ جن حالات میں مجھے جیل میں رکھا گیا، اس کا ذکر نہیں کروں گا۔ میری چھ ماہ بعد ضمانت ہوئی لیکن پورا انصاف نہیں ہوا۔ جن لوگوں نے جھوٹا مقدمہ درج کرایا اللہ کا قہر اور غضب ان پہ نازل ہو ، اگر میں جھوٹا ہوں تو مجھ پہ اللہ کا قہر اور غضب نازل ہو

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.