fbpx

شہزادہ چارلس برطانوی تخت و تاج کےباقاعدہ بادشاہ بن گئے

ملکہ برطانیہ کی وفات کے بعد شاہی تخت فوری طور پر ان کے جانشین اور ویلز کے سابق شہزادے چارلس کو سونپ دیا گیا ہے۔ملکہ الزبتھ دوم کے جمعرات کو انتقال کے بعد چارلس اصولاً بادشاہ بن گئے تھے لیکن آج بروزہ ہفتہ 10 ستمبر کو منعقد ہونے والی تقریب ملک میں نئے بادشاہ کو متعارف کرانے کے لیے ایک اہم آئینی اور رسمی اقدام ہے۔اس سلسلے میں لندن کی شاہی رہائش گاہ سینٹ جیمز پیلس میں باڈی ایکسیشن کونسل کی تقریب منعقد ہوئی، جس میں بادشاہ چارلس کے ساتھ اہلیہ کمیلا اور ولی عہد ولیم بھی موجود تھے۔ تقریب میں کنگ چارلس نے حلف نامے پر دستخط کیے۔

تقریب میں بادشاہ چارلس نے شہنشاہ برطانیہ کے عہدے کا حلف اٹھالیا، جس کے بعد سینٹ جیمز محل کی بالکونی سے چارلس کو باضابطہ بادشاہ بنائے جانے کا اعلان ہوا۔اعلان کے ساتھ ہی لندن ٹاور اورہائیڈ پارک سے توپوں کی سلامی دی گئی۔ اس موقع پر بادشاہ چارلس نے چرچ آف اسکاٹ لینڈ کی روایات کی پاسداری کا عزم بھی اٹھایا۔

لندن کی شاہی رہائش گاہ سینٹ جیمز پیلس میں ہونے والی تقریب میں الحاق کونسل نے شرکت کی جو بادشاہ کو مشورہ دینے والے سینیر سیاست دانوں اور حکام پر مشتمل ہے۔ کونسل نے اس موقع پر باضابطہ طور پر ان کو ‘کنگ چارلس سوم’ کا لقب دیا۔ اس کے بعد بادشاہ کے حلف اور اعلانات کا سلسلہ جاری رہے گا۔تقریب سے خطاب میں شاہ چارلس کا کہنا تھا کہ دنیا بھر سے ملکہ برطانیہ کی وفات پر اظہار افسوس کیا گیا، ملکہ برطانیہ کی وفات ہمارے خاندان کیلئے صدمہ ہے۔ بطور بادشاہ انہیں ذمہ داریوں کا احساس ہے۔

ملکہ برطانیہ نے بہترین انداز میں ذمہ داریاں ادا کیں۔ عام تاثر یہ ہے کہ شاہ چارلس کی تاجپوشی میں مزید کئی ماہ لگیں گے۔ اس سے قبل ملکہ الزبتھ کے والد کے انتقال کے سولہ ماہ بعد تاجپوشی کی تقریب جاری رہی تھی۔کونسل کی جانب سے اعلان میں کہا گیا: ‘شہزادہ چارلس فلپ آرتھر جارج اب ہماری ملکہ، جن کی خوشگوار یادیں ہمارے ساتھ ہیں، کی موت کے بعد ہمارے بادشاہ چارلس سوم بن گئے ہیں۔ خداوند بادشاہ کی حفاظت فرمائے۔’

تقریب میں چارلس کے ساتھ ان کی اہلیہ کیملا، جو اب ملکہ کنسورٹ ہیں اور ان کے بڑے صاحبزادے شہزادہ ولیم بھی موجود تھے۔ ولیم اب تخت کے وارث اور ولی عہد ہیں جن کو ان کے والد کے لقب یعنی پرنس آف ویلز سے نوازا گیا ہے۔تقریب کے بعد ایک شاہی اہلکار نے سینٹ جیمز پیلس کی بالکونی سے بلند آواز میں اعلان کیا۔

یہ عمل لندن اور برطانیہ بھر میں دیگر مقامات پر بھی کیا جائے گا۔ اسکاٹ لینڈ کے بالمورل کیسل میں تخت پر بے مثال 70 سال گزارنے والی 96 سالہ ملکہ کی موت کے دو دن بعد لوگ اب بھی ہزاروں کی تعداد میں لندن کے بکنگھم پیلس کے باہر ان کی تعزیت کے لیے جمع ہیں۔یہ مناظر برطانیہ بھر میں دیگر شاہی محلات اور دنیا بھر میں برطانوی سفارت خانوں کے باہر بھی دیکھے جا رہے ہیں۔

یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ تاریخ میں پہلی بار براہ راست نشر ہونے والی قدیم روایت اور سیاسی علامت پر مبنی تقریب میں برطانیہ کے نئے بادشاہ بننے کا باضابطہ طور پر اعلان کیا گیا ہے۔ یہ تقریب 1952 کے بعد پہلی بار منعقد کی گئی ہے جب ملکہ الزبتھ دوم نے تخت سنبھالا تھا۔

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کانجو اور سوات کا دورہ کیا

وزیراعظم شہباز شریف نے چارسدہ میں سیلاب سے متاثرہ علاقوں کا دورہ کیا

پاک فضائیہ کی خیبر پختونخوا، سندھ، بلوچستان اور جنوبی پنجاب کے سیلاب سے شدید متاثرہ علاقوں میں امدادی کارروائیاں۔