پی ایس ایل فائنل، مقابلہ سنسنی خیز مرحلے میں داخل ہو گیا

کراچی کنگز کو دو وکٹوں کا مزید نقصان ،اب تک چار وکٹوں کے نقصان کے ساتھ کراچی کنگز 17 واں اوور کھیل رہی ہے کراچی کنگز کو جیت کیلیے 16 گیندوں پہ 11 رنز درکار ہیں ،پی ایس ایل فائنل کیلے مقابلہ سنسنی خیز مرحلے میں داخل ہو چکا ہے

بابر اعظم نے شاندار کھیل کا مظاہرہ کرتے ہوئے 50 رنز مکمل کر کے آؤٹ ہو گئے ہیں ،جبکہ لاہور قلندرز کی باؤلنگ ایک دم فارم میں آگئی ہے

پی ایس ایل فائنل لاہور قلندرز نے بیٹنگ مکمل کرتے ہوئے کراچی کنگزکوسات وکٹوں کے نقصان پر 135رنزکاہدف دیا، ‏وقاص مقصود،عمیدآصف اورارشد اقبال نے 2،2 وکٹیں حاصل کیں ،بین ڈنک 11،سمت پٹیل 5،محمدحفیظ 2 رنزبناسکے،‏تمیم اقبال 35،فخر زمان 27 ،سہیل اختر14رنزبناکرآؤٹ ہوئے

باغی ٹی وی رپورٹ کے مطابق، لاہور قلندر نے اپنی اننگز مکمل کرتے ہوئے 134 رنز بنا ئے
پاکستان سپر لیگ 2020 کے فائنل میچ میں لاہور قلندرز نے کراچی کنگز کیخلاف ٹاس جیت کر بیٹنگ کا فیصلہ کیا

لاہور قلندرز کے کپتان سہیل اختر نے ٹاس کے بعد گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پہلے بیٹنگ کر کے کراچی کنگز کو بڑا ہدف دینا چاہتے ہیں۔لاہور قلندرز نے ایلی مینیٹڑز ون میں پشاور زلمی اور ٹو میں ملتان سلطانز کو شکست دے کر فائنل میں قدم رکھا۔پی ایس ایل میں دونوں ٹیمیں اب تک دس بار مدمقابل آئی ہیں۔ چھ بار جیت کراچی تو چار بار لاہور کے حصے میں آئی۔

رواں سیزن میں دونوں ٹیموں کے درمیان دو میچ ہوئے۔ ایک میچ کنگز اور ایک قلندرز نے اپنے نام کیا۔اعدادوشمار پر نظر ڈالی جائے تو دونوں ٹیموں کے درمیان کھیلے گئے پاکستان سپر لیگ کے اب تک کے میچوں میں کراچی کنگز کو لاہور قلندرز پر برتری حاصل ہے۔ اب تک دونوں ٹیموں کے درمیان 10 میچز کھیلے گئے جن میں کراچی کنگز نے 6 جبکہ لاہور قلندرز نے 4 میچوں میں کامیابی حاصل کی۔

پاکستان سپر لیگ میں کراچی کنگز اور لاہور قلندرز کے درمیان میچز شائقین کی بھرپور توجہ کا مرکز رہے۔ فائنل میں جیت کے لئے کراچی کنگز کے کپتان عماد وسیم پرامید ہیں۔ محمد عامر اور بابر اعظم کراچی کنگز کے اہم ہتھیار ہوں گے جبکہ لاہور قلندرز کی ٹیم اس وقت بھرپور فارم میں نظر آ رہی ہے۔ لاہور قلندرز کے فاسٹ باؤلرز شاہین آفریدی اور حارث رؤف کی کارکردگی بھی مثالی رہی۔

لاہور قلندرز کے کپتان سہیل اختر نے کہا ہے کہ ٹی ٹونٹی کرکٹ میں ایک دو کھلاڑیوں کا پرفارم کرنا بھی کافی ہوتا ہے، ہمارے ہر کھلاڑی نے پرفارم کیا ہے جس کی وجہ سے فائنل تک پہنچے۔ انہوں نے کہا کہ محمد حفیظ بہت سینئر کھلاڑی ہیں، ان سے مشورے کرتا رہتا ہوں تاہم آخری فیصلہ میرا ہی ہوتا ہے

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.