fbpx

پی ٹی آئی کا وزیراعظم ہاؤس کا آفیشل ٹوئٹر ہینڈل نئی حکومت کو دینے سے انکار

پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے جاتے ہوئے چند سوشل میڈیا کے آفیشل اکاؤنٹس نئی حکومت کے حوالے کرنے سے انکار کردیا۔

ذرائع کے مطابق ڈیجیٹل ایسٹس میں وزیراعظم آفس کا آفیشل ٹوئٹر ہینڈل بھی شامل ہے جس کے باعث نئی حکومت کو معلومات کی فراہمی میں مشکلات کا سامنا ہے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ پی ٹی آئی نے پرانے ڈیجیٹل ایسٹس کو بند کردیا، یہ اکاؤنٹس حکومت پاکستان کی ملکیت ہیں۔

وزیراعظم پاکستان کے یوٹیوب چینل کا نام تبدیل کرکے ’عمران خان‘ کردیا گیاذرائع بتاتے ہیں کہ نئی حکومت کو وزیراعظم آفس کا نیا ٹوئٹرہینڈل بنا کرکام شروع کرناپڑا۔

خیال رہے کہ گزشتہ دنوں وزیراعظم پاکستان آفس کے یوٹیوب چینل کا نام تبدیل کرکے ’عمران خان‘ کردیا گیا تھا۔
وزیراعظم پاکستان کے نام سے یوٹیوب چینل 2019 میں بنایا گیا تھا اور یہ چینل باقاعدہ طور پر ویریفائیڈ تھا

ادھر ذرائع کے مطابق سابق وزیر اعظم عمران خان کل پشاور میں جلسہ عام سے خطاب کریں گے۔

تفصیلات کے مطابق پشاور میں رنگ رو ڈ سے ملحقہ گراونڈ میں پاکستان تحریک انصاف کے جلسے کیلئے تیاریاں جاری ہیں۔

سابق وزیر اعظم عمران خان کل رات نو بجے پشاور میں جلسہ عام سے خطاب کریں گے، یہ جلسہ عمران خان کا حکومت کے خاتمے کے بعد پہلا جلسہ ہے۔

جلسے کیلئے انتظامات مکمل کئے گئے ہیں جبکہ ساونڈ سسٹم اور لائٹنگ سمیت دیگر انتظامات ڈی جے بٹ کے سپرد کیئے گئے ہیں۔

جلسے کے لئے 80 فٹ چوڑا 20 فٹ اونچا سٹیج تیار کیا جارہا ہے جبکہ اسٹیج پر پر بڑی اسکرین بھی لگائی جائے گی۔

واضح رہے کہ چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کی زیر صدارت سیاسی کمیٹی کا اجلاس ہوا جس میں آئندہ کی حکمت عملی پر غور کیا گیا۔

اجلاس کے دوران پشاور،کراچی کے بعد مینار پاکستان لاہور میں جلسے کی بھی تجویز دی گئی۔

اجلاس عمران خان نے پارٹی رہنماؤں کو عوام سے رابطے میں رہنے کی ہدایت دی جبکہ عمران خان نے کارکنوں پر مقدمہ کے خلاف ہائیکورٹس سے رجوع کرنے کی بھی ہدایت دی۔

عمران خان نے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہا کہ کل پشاور میں بڑا جلسہ کریں گے، کسی صورت اس حکومت کو تسلیم نہیں کریں گے۔

اجلاس میں شاہ محمود قریشی، فواد چودھری ،خسرو بختیار، علی امین گنڈاپور فرخ حبیب، شہباز گل، امین اسلم سمیت، قاسم سوری سمیت دیگر شریک ہوئے۔