fbpx

پبلک اکاﺅنٹس کمیٹی میں پارلیمنٹ ہاؤس کے ملازمین بارے حیرت انگیز انکشاف

پبلک اکاﺅنٹس کمیٹی میں پارلیمنٹ ہاؤس کے ملازمین بارے حیرت انگیز انکشاف

باغی ٹی وی پبلک اکاﺅنٹس کمیٹی میں انکشاف ہواہے کہ پارلیمنٹ ہاؤ س میں بھی ملازمین کے لیے پینے کے صاف پانی کی سہولت میسر نہیں ہے ،کمیٹی نے سی ڈی اے کو پارلیمنٹ ہاوس میں ملازمین کو صاف پانی کی فراہمی یقینی بنانے کی ہدایت کردی ۔سینیٹ و قومی اسمبلی کی سوسائٹی میں تاخیر پر شاہدہ اختر علی اور نورعالم اور ریاض فتیانہ پر مشتمل تین رکنی کمیٹی بنادی گئی۔حکام نے کمیٹی کوبتایاکہ سکردو ائیرپورٹ کی رن وے میں 2ماہ میں توسیع کے بعد بین الاقومی پروازیں شروع کردیں گے ،

گوادر ائیرپورٹ چینی کمپنی کودسمبر 2022میں ہر صورت میں مکمل کرنے کاکہاہے ، گوادر کا نیا رن وے مکمل ہوگا تو بین الاقوامی پروازیں شروع کردیں گے،ڈی آئی خان ائیرپورٹ پر فیول کا مسئلہ ہے اگر یہ حل ہوجائے تو پروازیں شروع کردیں گے۔جمعرات کو پبلک اکاﺅنٹس کمیٹی کااجلاس چیرمین کمیٹی راناتنویرحسین کی سربراہی میں پارلیمنٹ ہاوس میں ہوا۔اجلاس میں رکن کمیٹی مشاہد حسین سید، نور عالم سردار نصراللہ خان دریشک، راجہ ریاض، سردارایاز صادق، ریاض فتیانہ محمد ابراہیم خان شاہدہ اختر علی منزہ حسن، حنا ربانی کھرنے شرکت کی جبکہ کمیٹی میں سیکرٹری وزارت داخلہ و ایوی ایشن سی ای او پی آئی اے ارشد ملک آڈٹ حکام نے شرکت کی ۔

چیرمین کمیٹی رانا تنویرنے کہاکہ سی ڈی اے نے رپورٹ مکمل نہیں دی ہے۔چیرمین سی ڈی اے نے کمیٹی کوبتایاکہ انڈسٹری سٹیٹ میں پلاٹ کے حوالے سے بتایاکہ پلاٹ ان کو دیا گیا اس میں کمرشل سرگرمیاں نہیں ہوسکتی ہے یہ زیرو ریٹ پر زمین دی گئی ہے اس زمین کا استعمال تبدیل نہیں ہوسکتا ہے اگر اس کو تبدیل کیا جائے تو اس کے چارجز ہونے چاہیے۔جس چیز کی انڈسٹری لگ سکتی ہے وہ وہاں لگائی جاسکتی ہے۔نور عالم نے کہاکہ سینیٹ اور قومی اسمبلی کی سوسائٹی ہے اس میں مسائل ہیں لوگوں کو ابھی تک پلاٹ نہیں مل رہاہے 2008سے یہ مسائل ہیں ۔چیرمین سی ڈی اے نے کہاکہ اس کے مسائل حل کردیں گے ۔رکن کمیٹی شاہدہ اختر علی نے کہاکہ اس سوسائٹی کی زمین پر مقامی لوگ قابض ہوگئے ہیں۔پارلیمنٹ ہاوس میں پینے کا پانی تک نہیں ہے ہر فلور پر پانی کی سہولت دی جائے۔چیرمین کمیٹی نے کہاکہ سنٹورس ہوٹل کے لیے دی گئی زمین تھی جس پر کمرشل دکانیں بن گئی ہیں۔

سی ڈی اے حکام نے بتایا کہ اس کو دیکھ لیں گے کہ ان کوزمین ہوٹل کے لیے دی گئی تھی یا پلازہ بنانے کے لیے جو بھی ہوکمیٹی کوآگاہ کردیاجائے گا۔چیرمین کمیٹی نے سینیٹ و قومی اسمبلی کی سوسائٹی میں تاخیر پر شاہدہ اختر علی اور نورعالم اور ریاض فتیانہ پر مشتمل تین رکنی کمیٹی بنادی جو اس حوالے سے پیش رفت مسائل کا جائزہ لے گی اور اس کا حل کرے گی۔سیکرٹری ایوی ایشن نے کمیٹی کو گوادر ائیرپورٹ کے حوالے سے فنڈز لیپس ہونے کے حوالے سے بتایا کہ مانسہرہ اور بنوں کے لیے پی ایس ڈی پی سے پیسے ملے ہی نہیں ملے رتھے تو لیپس کیسے ہوگئے،گوادر کے حوالے سے پروجیکٹ ڈائریکٹر اس حوالے سے بتائیں گے۔

کمیٹی نے ایوی ایشن کے حوالے سے آڈٹ پیرز کوموخر کردیااور ہدایت کی کہ اس حوالے سے ڈی ایس سیز کی جائیں چیرمین کمیٹی نے کہاکہ پی اے سی ہونے کی ہدایت کے باوجود گوادر کے حوالے سے تین ماہ ہوگئے ہیںمگر ڈی اے سی نہیں ہوئی ڈی اے سی ایک ماہ میں ایک ضروری ہے۔مشاہد حسین سید نے کہاکہ گوادر سی پیک کامحور ہے کیوں گوادرائیرپورٹ بنانے میں تاخیر ہورہی ہے یہ باعث تشویش ہے جس پر پراجیکٹ ڈائریکٹر گوادر ائیرپورٹ نے کہاکہ غیرملکی امداد گوادرائیر پورٹ کے لیے ملی نہیں جس کی وجہ سے ہمیں پیسے نہیں دیئے گئے۔

اگر پیسے دیئے جاتے تو کام شروع ہوتا۔کمیٹی نے پوچھاکہ گوادر ائیرپورٹ کب مکمل ہ وگا جس پر سیکرٹری ایوی ایشن نے کمیٹی کو بتایا کہ نومبر2022میں گوادر ائیر پورٹ مکمل ہونا تھا کرونا کی وجہ سے تاخیر ہوئی ہے چینی کمپنی نے اب بتایاکہ دسمبر 2023میں گوادر ائیرپورٹ کومکمل کردیں گے۔ مگر ہم نے چینی کمپنی کو کہاہے کہ دسمبر 2022میں ہر صورت گوادر ائیرپورٹ مکمل کرکے دیں ۔رکن کمیٹی ریاض فتیانہ نے کہاکہ فیصل آباد ائیرپورٹ کی بری حالت ہے اس حوالے سے کیا کیا جارہاہے۔جس پرحکام نے بتایاکہ یہ ائیرپورٹ 2018میں مکمل ہواابھی تک کوئی مسائل نہیں اگر آپ نشاندہی کردیں تو اس کو حل کردیں گے۔ ڈی جی سول ایوی ایشن نے کراچی ائیرپورٹ پر کچن نہ بنانے کی وجہ سے 318.181ملین روپے نقصان کے حوالے سے بتایاکہ جس نے لیز پر زمین لی وہ عدالت میں چلاگیاہے اس نے کچن نہیں بنایامگرکرایہ باقاعدگی سے دے رہاہے ۔ منزہ حسن نے کہاکہ زمین جس مقصد کے لیے دی گئی اس پر عمل نہیں ہورہاہے سول ایوی ایشن کولیز منسوخ کردینی چاہیے کیوں 25سال تک انتظارکیاجارہاہے ۔شاہدہ اخترعلی نے کہاکہ یہ کیس عدالت میں ہے اس لیے کمیٹی کچھ نہیں کرسکتی ہے۔چیرمین کمیٹی نے سفارش کی اگر کچن نہیں بنا تو پیسے ریکور کرائے جائیں اس دورسے اب تک جتنے سول ایوی ایشن کے ڈی جی آئیں ہیں ان کے عرصے پر یہ رقم تقسیم کرکے ان سے وصول کی جائے کمیٹی نے گزشتہ 20سال جتنے ڈی جیز سول ایوی ایشن آئے ہیں ان کا لسٹ دیا جائے کمیٹی نے سول ایوی ایشن کی زمینوں پر قبضہ اور عدالتی کیسوں کی لسٹ دے دیں۔

مگر سیکرٹری کی طرف سے اس معاملے کی دوبارہ تحقیقات کرنے کی درخواست پر چیرمین کمیٹی نے اپنی سفارش واپس لے لی ۔شاہد ہ اختر علی نے کہاکہ ارکان پارلیمنٹ کی فضائی ٹکٹ کرونا کی وجہ سے استعمال نہیں ہوئے اور وہ اب ضائع ہوجائیں گے ان کوضائع ہونے سے بچایاجائے اور ان ٹکٹوں میں توسیع کردی جائے تاکہ ضائع نہ ہوں جس پر سی ای اوپی آئی اے ائیر مارشل ارشد ملک نے کہاکہ ارکان پارلیمنٹ کے ٹکٹوں میں توسیع کردیں گے وہ ضائع نہیں ہوگے ۔گوادر ائیرپورٹ اہم ہے اس سے فلائیٹس چلارہے ہیں ہم یہاں سے بین الاقومی فلائیٹس بھی شروع کرناچاہتے ہیں گوادر ائیرپورٹ کا نیا رن وے مکمل ہوگا تو بین الاقوامی پروازیں شروع کردیں گے تین مقامی فلائیٹ گوادر سے چلارہے ہیں۔ڈی آئی خان میں مسافر ہیں مگر ائیرپورٹ پر فیول کا مسئلہ ہے اگر یہ حل ہوجائے تو پروازیں شروع کردیں گے۔ڈی جی سول ایوی ایشن نے کہاکہ سکردو میں بین الاقوامی ائیرپورٹ بنائیں گے۔رن وے میں توسیع کا کام 2ماہ میں ہوجائے گا اور اس کے بعد بین الاقوامی پروازیں آنا شروع ہوجائیں گی۔

محمداویس