fbpx

پنجاب کے بلدیاتی انتخابات ای وی ایم سے کرانے پر رضامندی:لیکن کیا ایسے ممکن بھی ہے؟

اسلام آباد: پنجاب کے بلدیاتی انتخابات ای وی ایم سے کرانے پر رضامندی:لیکن کیا ایسے ممکن بھی ہے؟اطلاعات کے مطابق الیکشن کمیشن نے پنجاب کے بلدیاتی انتخابات ای وی ایم سے کرانے پر رضامندی ظاہر کردی ہے۔

چیف الیکشن کمشنر کی زیر صدارت الیکشن کمیشن میں اہم اجلاس ہوا جس میں پنجاب کے بلدیاتی انتخابات اور صوبہ میں حلقہ بندیوں سے متعلق غور کیا گیا۔ اجلاس کو سیکرٹری لوکل گورنمنٹ پنجاب نے پنجاب لوکل گورنمنٹ آرڈیننس 2021کے اہم پہلووں پر بریفنگ دی ۔

اجلاس کو سپیشل سیکرٹری الیکشن کمیشن نے لوکل گورنمنٹ آرڈیننس 2021 میں موجود چند ترامیم کی تجویز دی جس پر الیکشن کمیشن نے پنجاب کے بلدیاتی انتخابات ای وی ایم سے کرانے پر رضامندی ظاہر کردی۔

الیکشن کمیشن کا کہنا ہے کہ پنجاب میں بلدیاتی انتخابات کے دوران کسی ٹیکنالوجی بشمول ای وی ایم پر الیکشن کمیشن کو کوئی اعتراض نہیں ہے۔ اگر وفاقی یا صوبائی حکومت ان مشینوں کو خود تیار کرے توالیکشن کمیشن ای وی ایم کا استعمال کرنے کو تیار ہے۔ پنجاب میں بلدیاتی انتخابات کے دوران 2 لاکھ 5 ہزار مشین درکار ہوں گی،الیکشن کمیشن نے مشینوں کی خریداری مارکیٹ سے کرنی ہے تو تمام قواعد وضوابط اور پیرا رولز کے مطابق خریداری کی جائے گی۔

الیکشن کمیشن نے کہا کہ چند ویلج اورنیبر ہوڈ کونسلوں میں ای وی ایم کی پائلٹ ٹیسٹنگ بھی کی جا سکتی ہے،لوکل گورنمنٹس تحلیل ہونے کے بعد 120دن کے اندر انتخابات کا انعقاد ضروری ہے۔ 120 دن کے اندر مشینوں کی خریداری ممکن نہیں۔

Facebook Notice for EU! You need to login to view and post FB Comments!