fbpx

پنجاب اسمبلی کی خود مختار حیثیت ختم، گورنر نے آرڈینینس جاری کر دیا

پنجاب میں سیاسی بحران جاری ہے، حکومت اور اپوزیشن کے درمیان سرد جنگ کا خاتمہ نہ ہو سکا.گورنر پنجاب کے حکم پر پنجاب اسمبلی کا بجٹ اجلاس ایوان اقبال میں منعقد کرنے کے نوٹیفیکیشن کے بعد گورنر پنجاب نے آرڈینینس جاری کر دیا جس کے مطابق سیکرٹری قانون احمد رضا سرور نے سیکرٹری پیجاب اسمبلی کی حثیت سے اختیارات سنبھال لیے ہیں .

ذرائع کے مطابق پنجاب اسمبلی کی خود مختار حیثیت ختم کر دی ہے ، حکومت پنجاب نے پنجاب اسمبلی کو دوبارہ محکمہ قانون کا سپیشل انسٹی ٹیوٹ بنادیا۔گورنر پنجاب کی جانب سے باقاعدہ نوٹیفیکیشن جاری کر دیا گیا.

آرڈینینس کے مطابق سیکریٹری اسمبلی اب سیشن بلانے یا برخواست کرنے کا اختیار نہیں رکھتے۔زرائع کے مطابق سیکرٹری قانون نے ایوان اقبال میں اسمبلی سیکرٹریٹ کو پہنچنے کی ہدایت کر دی،گورنر پنجاب کے حکم کے مطابق پنجاب اسمبلی کا بجٹ اجلاس ایوان اقبال میں منعقد ہوگا۔ سیکرٹری قانون آج مینٹنگ چیئر کریں گئے

زرائع کے مطابق آرڈینینس جاری ہونے سے سپیکر پنجاب اسمبلی کے کار خاص اورسیکرٹری پنجاب اسمبلی محمد خان بھٹی کی من مانیاں ختم ہوگئیں,محمد خان بھٹی محکمہ قانون کے ماتحت ہونگے۔ پنجاب اسمبلی کو دوبارہ محکمہ قانون کے ماتحت کر دیا گیا۔

سابق وزیر اعظم چودھری شجاعت حسین نےاسمبلی اجلاس ایوان اقبال میں ہونے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ شاید پنجاب حکومت نے اسمبلی کے اختیارات کو محدود کرنے کیلئے ایوان اقبال میں یہ اجلاس بلایا ہے، ارکان اسمبلی پنجاب اسمبلی بلڈنگ والے اجلاس میں جائیں اور اپنے اختیارات کا تحفظ کریں،آجکل سیاست تماش بینوں کے ہتھے چڑھ گئی ہے، ڈر ہے کہ تماش بین ملک کا تماشہ بنانے کی کوشش کررہے ہیں، اسمبلی اجلاس تماش بینوں کے ہاتھ نہ چڑھ جائے، کیونکہ تماشبین اپنا تماشہ لگا رہے ہیں وہ قوم کو تماشہ نہ بنائیں.

ذرائع کا کہنا ہےکہ اسپیکر کے اختیارات محدود کرنے کا فیصلہ اسپیکر پنجاب اسمبلی کے رویے کے باعث کیا گیا ہے۔ اختیارات محدود کرنے کے لیے محکمہ قانون نے سمری تیار کی۔ اسمبلی کے رولز آف بزنس میں آرڈینینس کے ذریعے ترامیم کی گئی.

دوسری جانب ق لیگ اور پی ٹی آئی نے اراکین کو ایوانِ اقبال میں ہونے والے پنجاب اسمبلی کے بجٹ اجلاس میں جانے سے روک دیا۔ پی ٹی آئی کے پنجاب اسمبلی میں پارلیمانی لیڈر محمود الرشید کا کہنا ہے کہ اراکین کو اطلاع کر دی ہے کہ پرویز الہٰی کی زیرِ صدارت اجلاس میں شریک ہوں۔

تحریکِ انصاف نے تمام اراکینِ اسمبلی کو مراسلہ بھی جاری کر دیا، اراکینِ اسمبلی کو خط پارلیمانی لیڈر میاں محمود الرشید کی جانب سے لکھا گیا ہے۔ مراسلے میں بتایا گیا ہے کہ پنجاب اسمبلی کا اجلاس اسپیکر پرویز الہٰی کی زیرِ صدارت ہو رہا ہے۔ ارکانِ اسمبلی چوہدری پرویز الہٰی کی زیرِ صدارت اجلاس میں شرکت کریں، پنجاب اسمبلی کے سوا کسی اور جگہ اجلاس میں شرکت نہ کی جائے۔

پنجاب اسمبلی کے آج 2 الگ الگ اجلاس منعقد ہو رہے ہیں .گورنر پنجاب بلیغ الرحمٰن کا طلب کردہ پنجاب حکومت کا بجٹ اجلاس آج دوپہر 2 بجے ایوانِ اقبال میں ہو گا جبکہ اسپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الہٰی نے اجلاس دوپہر 1 بجے طلب کر رکھا ہے۔

زرائع کے مطابق ڈپٹی اسپیکر پنجاب اسمبلی سردار دوست محمد مزاری نے ایوانِ اقبال میں ہونے والے اجلاس میں شرکت کا فیصلہ کر لیا۔ ڈپٹی اسپیکر پنجاب اسمبلی دوست مزاری اجلاس میں شرکت کے لیے اسلام آباد سے لاہور پہنچ گئے۔

واضح رہے کہ پنجاب اسمبلی میں بجٹ پیش کرنے کے معاملے پر بحران جاری ہے، دو روز ہو گئے، اسمبلی میں صوبائی بجٹ پیش نہ کیا جاسکا۔اسپیکر پرویز الٰہی اور اپوزیشن ارکان اپنے مطالبے پر قائم اور حکومت اپنے مؤقف پر ڈٹی ہوئی ہے۔