fbpx

پنجاب اسمبلی سیکرٹریٹ کےآفیسرز کیخلاف اچانک پولیس متحرک،متعدد آفیسرز زیرحراست

پنجاب اوراسمبلی کا آئینی قانونی بحران ، پنجاب اسمبلی سیکرٹریٹ کے آفیسرز کے خلاف اچانک پولیس متحرک ہو گئی-

باغی ٹی وی : تفصیلات کے مطابق پنجاب اسمبلی آفیسرز کی گرفتاریوں کے لئے پولیس کے چھاپے ، کچھ اسمبلی آفیسرز کو حراست میں لے لیا گیا سیکرٹری پنجاب اسمبلی محمد خان بھٹی کے گھر کے باہر اچانک پولیس تعینات کردی گئی-

ذرائع کے مطابق پولیس کے اہلکار جی او آر میں سیکرٹری اسمبلی محمد خان بھٹی کی رہائش گاہ پر تعینات کردیئےگئے محمد خان بھٹی جی او آر میں اپنی رہائش گاہ پر موجود نہیں ،پہلے سے خفیہ مقام پر رہائش پذیر ہیں –

ذرائع کا کہنا ہے کہ سیکرٹری ا سمبلی محمد خان بھٹی کے ساتھ تعینات اسمبلی کے دو سیکورٹی آفیسرز کو بھی پولیس نے حراست میں لےلیا علی ذیشان جونیئر سیکورٹی اسسٹنٹ اورغلام مرتضی جونیئرسیکورٹی اسسٹنٹ کوحراست میں لیا گیا ہےدونوں سیکورٹی افیسرز گریڈ گیار ہ کے پنجاب اسمبلی کے آفیسرز ہیں-

حکومت کے ہاتھ میں فیصلہ ہے، الیکشن کرانا ہیں یابرے حادثے کا شکا ر ہونا ہے،شیخ رشید

ذرائع کے مطابق سیکرٹری اسمبلی کےساتھ تعینات ریسرچ آفیسر شہباز احمد کو بھی پولیس نے حراست میں لے لیا شہباز احمد گریڈ سترہ کے پنجاب اسمبلی کے آفیسر ہے سپیکر پنجاب اسمبلی کے پرسنل سٹاف آفیسر حمزہ کے گھر پر بھی پولیس نے چھاپے مارے تاہم سپیکر پنجاب اسمبلی کے پرسنل سٹاف آفیسر حمزہ کو حراست میں نہ لیاجاسکا-

سیکرٹری اسمبلی محمد خان بھٹی کو پہلےبھی تین ایم پی او کےتحت حراست میں لینےکی کوشش کی گئی تھی سیکرٹری کوارڈینینش عنائت اللہ لک کو گزشتہ دنوں تین ایم پی او کے تحت حراست میں لے لیا گیا تھا دونوں آفیسرز ڈپٹی کمشنر کے خلاف لاہور ہائیکورٹ میں قانونی ریلیف کے لئے گئے تھے-