پنجاب کابینہ اجلاس،چارماہ کا عبوری بجٹ منظور

انفارمیشن ٹیکنالوجی کیلئے 2ارب روپے مختص کئے ہیں
0
49
mohsin naqvi

نگران وزیراعلی پنجاب سید محسن رضا نقوی کی زیرصدارت صوبائی کابینہ کا اجلاس ہوا،

پنجاب کابینہ کا ورکرز کی کم از کم اجرت کا اطلاق یکم جولائی 2023 سے کرنے کا فیصلہ کیا گیا،ورکرز کی کم از کم اجرت 32 ہزار روپے کا اطلاق یکم جولائی 2023 سے ہوگا.‏پنجاب کی نگران کابینہ نے 4 ماہ (نومبر 2023 تا فروری 2024) کے لیے عبوری بجٹ کی منظوری دے دی ،4 ماہ کےلئے بجٹ کا تخمینہ 2076.2 ارب روپے لگایا گیا،زرعی شعبہ کی ترقی کے لیے 10 ارب روپے بجٹ میں مختص کیے گئے،نیشنل ہیلتھ سپورٹ پروگرام کے لیے ایک ارب 80 کروڑ روپے مختص کرنے کا فیصلہ کیا گیا،پنجاب ٹیکسٹ بکس کے لیے 5 ارب روپے مختص کرنے کی منظوری دی گئی،غیرملکیوں کو بھجوانے کے لیے 40 کروڑ روپے بجٹ میں مختص کئے گئے،موسمیاتی تبدیلیوں کے چیلنج سے نمٹنے کے لئے 7 ارب 30 کروڑ روپے مختص کرنے کی منظوری دی گئی،ترقیاتی سکیموں کیلئے 351 ارب روپے بجٹ میں مختص کیے گئے،غیر ترقیاتی اخراجات کے لیے 1718 ارب روپے بجٹ میں مختص کیے گئے ،صحت کے شعبہ کے لیے 208 ارب روپے اور تعلیم کے لئے 222 ارب روپے بجٹ میں مختص کیے گئے،صوبے کی عوام کو ریلیف دینے کے لیے 50 ارب روپے بجٹ میں مختص کیے گئے،سرکاری ملازمین کی تنخواہوں کے لیے 170 روپے بجٹ میں مختص کیے گئے،پنشن کی مد میں 130 ارب روپے بجٹ میں مختص کیے گئے،

،پنجاب میں غیر قانونی مقیم غیرملکیوں کی واپسی کے لیے تیاریاں مکمل کر لی گئیں، غیر قانونی غیر ملکی افراد کے انخلا کیلئے تیاریاں فیصلہ کُن مراحل میں داخل ہو گئیں ،مختلف آبادیوں میں لوگوں کی سکیننگ اور غیر ملکی افراد کے میپنگ کا عمل تقریبا مکمل ہو گیا،یکم نومبر سے غیر قانونی غیر ملکیوں کو ملک بدر کرنے کے لیے تمام ضروری اقدامات کر لیے گئے،غیر قانونی غیر ملکی افراد کے لیے مختلف اضلاع میں ہولڈنگ ایریاز اور عارضی کیمپس قائم کر دیئے گئے،ان کیمپوں میں رہائش، کھانے پینے، طبی امداد اور سیکیورٹی کے جامع انتظامات کیے گئے ہیں.

نگران کابینہ کے اجلاس کے بعد نگران وزیر اطلاعات پنجاب عامر میر نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہاکہ صوبائی کابینہ نے آئندہ 4ماہ کیلئے بجٹ کی منظوری دیدی ہے ترقیاتی منصوبوں کیلئے 351ارب روپے مختص کئے گئے ہیں، انفارمیشن ٹیکنالوجی کیلئے 2ارب روپے مختص کئے ہیں.غیرقانونی غیرملکیوں کیخلاف یکم نومبر سے کریک ڈاؤن ہوگا، عام انتخابات مقررہ وقت پر ہوں گے.

عمران خان نااہل ہو کر باہر جائیں گے؟

موجودہ حکومت نے مشکلات کے باوجود اچھا بجٹ پیش کیا

یہ بجٹ سود خوروں کا ہے، عوام کیلئے کوئی ریلیف نہیں. سینیٹر مشتاق احمد

وفاقی بجٹ میں 200 ارب روپے کے اضافی ٹیکسز عائد. چیئرمین ایف بی آر

سرکاری ملازمین کی پنشن ،تنخواہ،اجرت میں اضافہ،پی ڈی ایم کا دوسرا بجٹ اسمبلی میں پیش

 وفاقی بجٹ میں نئے انتخابات کیلئے بھی رقم

Leave a reply