fbpx

قبرستان میں گرنے والے آہنی آلات کا معاملہ چند گھنٹوں میں حل

کراچی کے علاقے پاک کالونی کے میوہ شاہ قبرستان اور سائٹ میں فضا سے گرنے والے بھاری آہنی آلات قبروں، سڑک اور گھر میں دھنسنے کا معاملہ سامنے آیا تھا۔ایس ایس پی کیماڑی فدا حسین جانوری کی ہدایت پر متعلقہ تھانوں کی پولیس فوری طور پر حرکت میں آئی اور فوراً بم دسپوزل اسکواڈ کو بھی طلب کر لیا گیا۔عینی شاہدین کے بیانات لیے گئے اور بھاری آہنی آلات کا معائنہ کیا گیا تو وہ کسی اسٹیل مل کے بوائلر کے پارٹس ظاہر ہوے۔واضع رہے کہ چند گھنٹوں قبل میوہ شاہ قبرستان میں پراسرار اشیاء گرنے سے گڑھے پڑ گئےتھے اور قبریں بھی متاثر ہوئیں تھیں
پولیس کے مطابق اس سلسلے میں سائٹ کے علاقے ہارون آباد میں واقع اسٹیل مل سے معلومات لی گئیں تو گزشتہ رات اس اسٹیل مل میں بوائلر پھٹنے کے واقعہ کی تصدیق ہوئی جبکہ عینی شاہدین نے بھی یہ حصے رات کو گرنے کی تصدیق کی۔ایس ایس پی فدا حسین جانوری کے مطابق اسٹیل مل انتظامیہ کو مذکورہ آہنی آلات دکھائے گئے تو انہوں نے ان آلات کو بوائلر کے پارٹس کے طور پر شناخت کیا۔پولیس کے مطابق میوہ شاہ قبرستان میں یہ بھاری آہنی حصے گرنے سے قبروں کو نقصان پہنچا، پاک کالونی میں ہی ایک حصہ سڑک پر گرنے سے سڑک دھنس گئی جبکہ سائٹ میں آئی جی ایس بیٹری کی فیکٹری کے قریب ایک آہنی حصہ گھر میں گرا جس سے گھر کو نقصان پہنچا، اس واقعہ میں ایک شخص زخمی ہوا۔پولیس کے مطابق واقعہ شرپسندی ہے اور نا ہی آسمان سے کوئی پراسرار چیز گری ہے بلکہ یہ اسٹیل مل کے بوائلر کے بھاری بھرکم حصے ہیں، ایک کلو میٹر کے علاقے میں یہ بھاری حصے گرنے سے دھماکے کی شدت کا اندازہ لگایا جا سکتا ہے۔پولیس کے مطابق اس سلسلے میں تاحال کوئی مقدمہ درج نہیں کیا گیا اور نا ہی کوئی گرفتاری عمل میں آئی ہے تاہم معاملے کی مزید چھان بین کی جا رہی ہے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.