قتل یا خودکشی ،لواحقین نے نمائندہ باغی ٹی وی کو حقیقت بتا دی

قصور
احتجاج کے باعث قصور بائی پاس بند ،کل راؤ خان والا میں پولٹری فارم پر خودکشی کرنے والے چودا سالہ بچے کے وارثین کا مؤقف کہ بچے کو جنسی زیادتی کے بعد قتل کیا گیا ہے
تفصیلات کے مطابق کل شام موضع راؤ خان والا تھانہ راجہ جنگ میں تنویر پولٹری فارم پر ایک چودہ سالہ بچے اویس کی لٹکی ہوئی لاش برآمد ہوئی
بچہ قصور کے نواحی گاؤں پیرو والا کا رہائشی ہے اور تین دن قبل اس کے لواحقین اسے تنویر پولٹری فارم موضع راؤ خان والا میں نوکری کے لئے چھوڑ کر آئے تھے کہ کل پولٹری فارم والوں نے اس کے والد کو کال کی کہ اویس کی طبیعت خراب ہے آپ جلدی پہنچیں جس پر لواحقین پولٹری فارم پہنچے تو اویس کی لاش پھندے پر جھول رہی تھی جس پر تھانہ راجہ جنگ کو اطلاع دی گئی جنہیں نے لاش ڈی ایچ کیو ہسپتال پہنچائی جہاں پوسٹمارٹم میں پتہ چلا کے اسے قتل کیا گیا ہے مگر پوسٹمارٹم رپورٹ کو بدلنے کی کوشش کرتے ہوئے کل کی تاریخ کی بجائے 16 فروری 2020 ڈال دی گئی اور حقائق کو مسخ کرنے کی کوشش کی گئی
والدین نے نمائندہ باغی ٹی وی کو بتایا کہ بچے کے ساتھ سات بندوں نے جنسی زیادتی کرنے کے بعد قتل کیا گیا ہے اور پولیس ابھی تک کاروائی کرنے سے گریزاں ہے
مظاہرین نے پولیس رویے اور حقائق کو مسخ کرنے پر لاش کو قصور بائی پاس پر رکھا ہوا ہے اور احتجاج کیا جا رہا ہے

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.