fbpx

عظیم شاعر اور فلمی نغمہ نگار قتیل شفائی کو دنیا سے رخصت ہوئے 20 برس بیت گئے

عظیم شاعر قتیل شفائی کو دنیا سے رخصت ہوئے 20 برس بیت گئے-

باغی ٹی وی : قتیل شفائی 24 دسمبر1919ء کو خیبر پختونخوا کے علاقے ہری پور میں پیدا ہوئے، ان کا اصل نام اورنگزیب خان تھا۔ ادبی تخلص قتیل کے ساتھ اپنے استاد شفاء کے نام کی مناسبت سے شفائی لگایا۔ اپنے فنی سفر کا آغاز پاکستان کی پہلی فلم ’تیری یاد‘ کی شاعری سے کیا۔

قتیل شفائی نے فلم نوکر، انتظار اور عشق لیلیٰ جیسی شہرہ آفاق فلموں کے گیت لکھے جو پاکستان کے علاوہ بھارت میں آج بھی گونجتے ہیں قتیل شفائی نے 201 فلموں میں 900 سے زائد گیت تحریر کیے۔

قتیل شفائی پاکستان کے پہلے فلمی نغمہ نگار تھے جنہیں بھارتی فلموں کے لیے نغمہ نگاری کا اعزاز بھی حاصل ہوا فنی خدمات کے اعتراف میں حکومت پاکستان کی جانب سے انہیں پرائیڈ آف پرفارمنس اور نقوش ایوارڈ سمیت کئی ایوارڈز سے نوازا گیا قتیل شفائی 11 جولائی 2001ء میں اپنے مداحوں کو سوگوار چھوڑ کر خالق حقیقی سے جا ملے تھے –