پاکستان کسی قسم کی بھارتی مہم جوئی کا منہ توڑ جواب دینے کیلئے تیار ہے، قومی سلامتی کمیٹی کا مشترکہ اعلامیہ جاری

وزیر اعظم پاکستان کی زیر صدارت قومی سلامتی کمیٹی کے مشترکہ اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ پاکستان کسی بھی بھارتی مہم جوئی کامنہ توڑجواب دینےکے لیے ہمہ وقت تیار ہے،

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق قومی سلامتی کمیٹی کے اجلاس کا مشترکہ اعلامیہ جاری کر دیا گیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ بھارتی ہٹ دھرمی سےخطے کاامن تباہ ہو رہاہے، پاکستان کشمیریوں کی اخلاقی، سیاسی اورسفارتی حمایت جاری رکھے گا، مقبوضہ کشمیر میں اضافی بھارتی فوج جلتی پر تیل چھڑکنے کے مترادف ہے، پاکستان کشمیریوں کو کبھی تنہا نہیں چھوڑے گا، پاکستان مسئلہ کشمیرکااقوام متحدہ کی قراردادوں،کشمیریوں کی خواہشات کیمطابق حل چاہتاہے، بھارتی اقدامات سےمقبوضہ کشمیرکی صورتحال انتہائی خراب ہورہی ہے،

اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ مسئلہ کشمیرکاحل کشمیریوں کی خواہشات کےمطابق چاہتے ہیں، پاکستان کو کشمیریوں کی حمایت سے روکا نہیں جاسکتا، عالمی قیادت اورادارےبھارتی غیرذمے دارانہ اورجارحانہ رویےکانوٹس لیں،

قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس، بھارتی شرانگیزیوں‌ کا جواب دینے کیلئے کیا ہوئے فیصلے؟ اہم خبر

واضح رہے کہ وزیراعظم کی زیر صدارت قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس ختم ہو گیا ہے، اجلاس میں قومی سلامتی کےامورپرغورکیاگیا اور بھارت کی جانب سےایل او سی کی خلاف ورزیوں کےمعاملے پرمشاورت کی گئی، اجلاس میں وزیردفاع،خارجہ،داخلہ اوروزیرامورکشمیرنےشرکت کی، اجلاس میں بھارت کی شرانگیزیوں کاموثر جواب دینے کی حکمت عملی تیار کرلی گئی ہے، وزیر خارجہ شاہ محمود ، ڈی جی ملٹری آپریشنزکی موجودہ صورتحال پر اجلاس کوبریفنگ دی گئی، اجلاس کے دوران بھارت کیجانب سےسویلین آبادی کوکلسٹربموں سےنشانہ بنانےکےمعاملےپرگفتگو کی گئی،

بھارت کشمیریوں‌کا قتل عام کررہا ہے اور عالمی برادری خاموش ہے ، آگے بڑھ کر بھارت کے مظالم روکنا ہوں گے ، اوآئی سی

اجلاس میں چیرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی سمیت تینوں مسلح افواج کےسربراہان شریک ہوئے، وزیرخارجہ اورڈی جی ملٹری آپریشنزکی طرف سے شرکاء کو اہم بریفنگ دی گئی،

اپوزیشن جماعتوں میں ٹوٹ پھوٹ یا کچھ اور؟ بلاول بھٹو نے مولانا فضل الرحمن سے کیوں کیا رابطہ؟ اہم خبر

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.