محکمہ ڈاک کا ملازم لاپتہ،سریاب روڈ کوئٹہ میں 5 روزسے خواتین کا احتجاج

0
81

کوئٹہ(آغا نیاز مگسی) گزشتہ 6 روز سے موسی کالونی کے قریب سریاب روڈ پر اقراء بلوچ کی قیادت میں خواتین نے احتجاجی کیمپ قائم کر کے روڈ بلاک کر رکھا ہے جس کی وجہ سے ٹریفک بند اور شہریوں کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے اقراء بلوچ محمد حسنی نے میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے یہ دعوی کیا ہے کہ میرا ماموں ظہیر احمد محمد حسنی جو کہ محکمہ ڈاک میں ملازم ہے 9 روز قبل اچانک لاپتہ ہو گیا ہے وہ ایک شریف شہری ہے انہوں نے کہا کہ ہمیں شک ہے کہ اسے لاپتہ کر دیا گیا ہے اقراء بلوچ نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ اگر ظہیر احمد پرکوئی کیس ہے یا اس پر کسی قسم کا کوئی شک ہے تو اسے عدالت میں پیش کیا جائے ، اس موقع پر ظہیر کی 5 بہنیں و دیگر خواتین بھی موجود تھیں ۔

موجودہ بجٹ معیشت، عوام ،ملک کے لئے تباہ کن ثابت ہوگا،شاہد خاقان عباسی

شاہد خاقان عباسی کچھ بڑا کریں گے؟ن لیگ کی آخری حکومت

پی ٹی آئی کی ڈیجیٹل دہشت گردی کا سیاہ جال،بیرون ملک سے مالی معاونت

جسٹس ملک شہزاد نے چیف جسٹس سے چھٹیاں مانگ لیں

اگر کارروائی نہیں ہو رہی تو ایک شخص داد رسی کیلئے کیا کرے؟چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ

عمران خان کیخلاف درخواست دینے پر جی ٹی وی نے رپورٹر کو معطل کردیا

سوال کرنا جرم بن گیا، صحافی محسن بلال کو نوکری سے "فارغ” کروا دیا گیا

صوبائی کابینہ نے بانی پی ٹی آئی کے خلاف شواہد کے تحت کارروائی کی اجازت دی

توشہ خانہ،نئی پالیسی کے تحت تحائف کون لے سکتا؟قائمہ کمیٹی میں تفصیلات پیش

باسکن رابنز پاکستان کو اربوں روپے جرمانے اور منی لانڈرنگ کی تحقیقات کا سامنا

اگلے دو مہینے بہت اہم،کچھ بڑا ہونیوالا؟عمران خان کی پہنچ بہت دور تک

اڈیالہ جیل میں قید عمران خان نے بالآخر گھٹنے ٹیک دیئے

جعلی ڈگری،جسٹس طارق جہانگیری کے خلاف ریفرنس دائر

"بھولے بابا” کا عام آدمی سے خود ساختہ بابا بننے کا سفر ،اربوں کے اثاثے

Leave a reply