میثاق جمہوریت کرنیوالے قومی مجرم،قربانی کا بکرا بننے کو تیار ہوں، مریم نواز

مسلم لیگ ن کی رہنما مریم نواز نے کہا ہے کہ میں‌ صحافیوں کے لئے بھی آواز اٹھاوں گی، قربانی کا بکرا بننے کو تیار ہوں، میثاق معیشت کرنے والے قومی مجرم ہوں گے، حکمرانوں کا گھیراو کرنا چاہئے.

نوازشریف کو کچھ ہوا تو ذمہ داری سب پر،جعلی حکومت سے ریلیف نہیں مانگتی، مریم نواز

نواز شریف کو اڈیالہ جیل میں ہوا تھا تیسرا ہارٹ اٹیک ،مریم نواز نے کیا پریس کانفرنس میں انکشاف

مریم نواز کا مزید کہنا تھا کہ جمعرات کو ملاقات کے دن آئندہ کا لائحہ عمل طے کریں گے، عدالت کا دروازہ بار بار کھٹکھٹایا اس امیدسے کہ ایک دن انصاف ملے گا.شہباز شریف مسلم لیگ ن کے صدر ہیں ان کا سیاسی ،ایڈمنسٹریٹو تجربہ ہے حب الوطنی پر کوئی شک نہیں، میثاق جمہوریت میں ان کے پیش نظر جو چیزیں ہیں وہ میرے نہیں ہوں گی، ان کی اپنی رائے ہے. میری ذاتی رائے دینے کا حق ہے ، جس شخص نے معیشت کا بیڑہ غرق کیا جو جعلی طریقے سے، چوردروازے سے اقتدار میں آیا ان کے ساتھ بات کرنے کی بھی ضرورت نہیں. میثاق معیشت کرنا حکمرانوں کو این آر او دینے کے مترادف ہے، اس پر تو حکمرانوں کا گھیراو ہونا چاہئے، جعلی وزیراعظم سے جواب لینا چاہئے، عوام کی عدالت میں اپوزیشن پارٹی جو میثاق معیشت کرے گی وہ مجرم کہلائے گی، جو ووٹ چوری کر کے حکومت میں آتا ہے اس کو میثاق کی آفر کی بجائے عبرت کا نشان بناتے ہیں .

مریم نواز نے کہا کہ وہ اپنی نااہلی کا ذمہ دار اپوزیشن پارٹیوں کو بنانا چاہتا ہے اس سے دور رہنا چاہئے. مریم نواز نے مزید کہا کہ میں میاں صاحب کا مقدمہ ہر جگہ لڑوں گی ،ایک بیٹی اپنے باپ کا مقدمہ کیوں نہ لڑے مجھے کوئی شرم نہیں، میں نہ صرف ان کا بلکہ صحافی جو پابندیوں اور خوف کا شکار ہیں ہمارا میسج آپ کے‌ذریعے پہنچتا ہے میں آپ کے لئے بھی آواز اٹھاوں گی، میں قربانی کا بکرا بنانے کو تیار ہوں،

مریم نواز نے مزید کہا کہ نالائق اعظم نے قرضے لینے کا ریکارڈ بنایا لیکن ایک اینٹ پاکستان میں نہیں لگائی ،کوئی مںصوبہ شروع نہیں کیا وہ آج کمیشن بنا رہا ہے جس نے حساب دینا ہے کہ اس نے دس ماہ میں ریکارڈ قرضے لئے پھر بھی قرضوں کا حجم بڑھ گیا وہ کٹہرے میں کھڑے ہونے کی بجائے کمیشن بنا رہا ہے.

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.