fbpx

ریلوے فریٹ سروس میں مارچ کے مہینے کے دوران نمایا اعدادوشمار

پاکستان ریلوے کراچی نے مارچ کےمہینے میں 21,766 رکارڈ ویگن لوڈ کرکے دو ارب سے زائد کا تاریخی منافع کمایا ہے۔ اس سے قبل اکتوبر 2019 میں محکمے نے 21,470 ویگن لوڈ کر کے 2.04 ارب روپے کمائے تھے۔ویگن لوڈ کرنے کے اعدادوشمار خاصی اہمیت کے حامل ہوتے ہیں اور اسٹاک کے استعمال کا اشارہ دیتے ہیں جس سے مہانہ آمدنی اور لوڈنگ اور ان لوڈنگ اسٹیشن پر جاری کام کا اندازہ لگایا جاسکتا ہے۔ یوسف والہ فریٹ سروس میں بھی لوڈنگ اور کمائی کے معاملے میں بہترین کارکردگی دیکھنے کو ملی۔ ریلوے نے پورے مہینے میں 5400 ویگن لوڈ کیں اور 1.32 ارب روپے کی آمدنی ہوئی جو جولائی 2018 میں لوڈ کی جانے والی 6,165 ویگن اور 1.36 ارب روپے کے منافع کے بعد دوسرے نمبر پر آتی ہے۔ البتہ ریلوے نے ایک ہی دن میں یوسف والہ کے لیئے ڈھائی گنا زیادہ یعنی مجموعی طور پر 392 ویگن لوڈ کیں جو اس سے قبل کبھی نہیں کی گئیں تھیں۔مارچ کے مہینے کی کارکردگی پر افسران اور ملازمین کو مبارکباد دیتے ہوئے ڈی ایس کراچی جناب محمد حنیف گل نے کہا کہ کراچی ڈویژن وزیر ریلوے جناب محمد اعظم خان سوتی صاحب کے فریٹ آمدنی کو دگنا کرنے کے عزم پر رواں دواں ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ آئندہ مہینوں میں اس کارکردگی کو دوہرانے کے ساتھ اس میں مزید بہتری کی کوشش بھی کی جائیگی۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.