fbpx

راج ببر کو سنائی گئی سزا لیکن کیوں ؟

بالی وڈ کے اداکار راج ببر کو حال ہی میں بھارتی عدالت نے آٹھ ہزار پانچ سو روپے جرمانہ کرنے کے ساتھ دو سال کی قید سنائی ہے۔ کہا جا رہا ہے کہ راج ببر نے انیس سو چھیانوے میں ایک پولنگ آفیسر کو تشدد کا نشانہ بنایا تھا بعد میں یہ کیس درج ہوا اور بالاخر چھبیس سال کے بعد اس کیس کا فیصلہ سنا دیا گیا ہے۔ ممبئی کی ایک عدالت نے دو سال قید کا فیصلہ سنا دیا ہے۔ یاد رہے کہ راج ببر کا پولنگ آفیسر پر تشدد کی خبر اُن دنوں میں بہت عام ہوئی تھی ،راج ببر سے اس ھوالے سے مختلف پلیٹ فارمز پر سوالات بھی ہوتے رہے لیکن انہوں نے کبھی بھی اس کا جواب نہیں دیا۔ جب یہ واقعہ ہوا اس وقت راج

ببر ملائم سنگھ یادو کے ساتھ تھے اور لکھنؤ کی سیٹ سے سماج وادی پارٹی کے ٹکٹ پر پارلیمانی انتخاب لڑ رہے تھے۔الیکشن کے دوران ہی پولنگ افسر اور ان کے درمیان پہلے زبانی تکرار ہوئی اور پھر ہاتھا پائی ہو گئی تھی۔ پولنگ افسر نے اپنیشکایت میں کہا تھا کہ راج ببر نے انہیں ڈیوٹی کے دوران ڈرایا دھمکایا اور فرائض سے روکنے کی کوشش کی۔
راج ببر کے پرستاروں کے لئے یقینا یہ خبر کوئی اچھی نہیں ہے لیکن عدالت نے انصاف کے تقاضوں کو پورا کرتے ہوئے اداکار کو نہ صرف جرمانہ کیا ہے بلکہ دو سال قید بھی سنائی ہے۔یاد رہے کہ راج ببر نے اداکاری کے ساتھ ساتھ سیاست میں بھی حصہ لیا.