ریپ کیسز ختم کروانے کے لئے ہاروی وائنسٹن نے اسرائیلی خفیہ ایجنسی کی خدمات حاصل کیں

0
40

نیویارک کی عدالت کی جانب سے قائم کی گئی 12 رکنی جیوری اور ججز کو 30 جنوری کو بتایا گیا کہ ہالی وڈ پروڈیوسرہاروی وائنسٹن نے 2017 میں نجی اسرائیلی خفیہ ایجنسی ’بلیک کیوب‘ کی خدمات حاصل کی تھیں

باغی ٹی وی رپورٹ کے مطابق ہالی وڈ پروڈیوسر 67 سالہ ہاروی وائنسٹن کے خلاف جاری ’ریپ‘ اور ’جنسی استحصال‘ کے مقدمے میں ان کے سابق وکیل ڈیو سین نے عدالت کو بتایا گیا ہے کہ انہوں نے میرے ذریعے ہی اپنے خلاف میڈیا میں چلنے والی خبروں کو ختم کروانے اور الزام لگانے والی خواتین سے معلومات حاصل کرکے اسے غلط طریقے سے استعمال کرنے کے لیے نجی اسرائیلی خفیہ ایجنسی کی خدمات حاصل کی تھیں

ڈیو سین جو ایک نجی قانونی فرم کے مالک ہیں انہوں نے ارکان اور ججز کو بتایا کہ اکتوبر 2017 میں نیویارک ٹائمز کی جانب سے ہاروی وائنسٹن کے خلاف شائع کیے گئے پہلے مضمون کے بعد فلم ساز نے اسرائیلی خفیہ ایجنسی کی خدمات حاصل کیں ہاروی وائنسٹن چاہتے تھے کہ اسرائیل کی خفیہ ایجنسی ان کے خلاف نیویارک ٹائمز میں شائع ہونے والے مضمون کوغلط ثابت کرتے ہوئے اس معاملے میں متنازع معلومات پھیلائے تاکہ لوگ ان پر لگائے گئے الزامات پر یقین نہ کریں

ڈیو سین نے عدالت کو بتایا کہ ہاروی وائنسٹن کے کہنے پر ان کی فرم نے ہی ’بلیک کیوب‘ کی خدمات حاصل کی تھیں انہوں نے بتایا کہ اسرائیلی خفیہ ایجنسی کو ٹارگٹ دیا گیا تھا کہ وہ ہاروی وائنسٹن پر الزام لگانے والی خواتین سے رابطہ کرکے ان سے ریپ اور جنسی ہراسانی کی معلومات حاصل کرنے کے بعد اس معلومات کو غلط انداز میں پھیلائیں نجی اسرائیلی خفیہ ایجنسی ’بلیک کیوب‘ میں اسرائیل کی خفیہ ایجنسی موساد کے سابق اہلکاروں سمیت دیگر جاسوس اداروں کے سابق اہلکار کام کرتے ہیں

یاد رہے کہ اس کے بارے میں نیویارک جیوری کے سامنے پیش ہونے والی پہلی اداکارہ 59 سالہ اینابیلا شیورہ نےبھی جیوری کو بتایا تھا کہ 2017 میں ان سے ایک مرد صحافی نے رابطہ کیا تھا اور ان کو صحافی نے خود کو ’دی گارجین‘ کا رپورٹر بتایا تھا اور ان سے انٹرویو کرنے کے بعد وہ غائب ہوگیا اور کبھی بھی ان کے ساتھ دوبارہ اس نے رابطہ نہیں کیا

Leave a reply