fbpx

طالبعلم کے والد نے مدرسے کو سازش کے تحت بدنام کرنے کے لیے معلم کیخلاف بدفعلی کا جھوٹا اوربے بنیادمقدمہ درج کرادیا۔

راولپنڈی:طالبعلم کے والد نے مدرسے کو سازش کے تحت بدنام کرنے کے لیے معلم کیخلاف بدفعلی کا جھوٹا اوربے بنیادمقدمہ درج کرادیا۔قاری عثمان نے آر پی او، سٹی پولیس آفیسرراولپنڈی سے جے آئی ٹی کی تشکیل کا مطالبہ کردیا۔ جبکہ اصل حقائق یہ ہیں کہ مبینہ طور پر بدفعلی کا شکار بچہ وقوعہ سے چار روز قبل مدرسے میں داخل ہوا اور شرارتیں کرنے اور بچوں کے آپس میں لڑائی کرنے پر جب مبینہ ملزم قاری عثمان نے بچے کو ڈانٹا تو بچے نے طبیعت خراب ہونے کا بہانا کیا جس پر فوری طورپر طبعی امداد کے لیے سول ہسپتال منتقل کیا گیا۔ہسپتال کے عملے نے طبعی امداد دی اور عملے نے بتایا کہ بچہ فرحان حسین سانس کی مرض کا پرانا مریض ہے،جبکہ فرحان کے والد نے اثرورسوخ استعمال کرکے بدفعلی کا بے بنیاد مقدمہ درج کروایا۔جبکہ مدعی مقدمہ نے تھانے میں جو درخواست دی اس میں بدفعلی کا کوئی ذکر نہیں تھا،

ایف آئی آر کا متن

ایف آئی آر کے متن میں بدفعلی کی بابت تحریر ہے جبکہ میڈیکل میں کمر درد،چھاتی درد،گردن اور پیٹ درد بیان کیا گیا،ایم ایل آر کا اندراج کے مطابق 5ستمبر 2021کو ہسپتال میں گیا جبکہ ایم ایل آر میں تاریخ وصولی 4ستمبر 2021درج ہے۔
ایم ایل آر کی کاپی

مدعی مقدمہ نے جھوٹا مقدمہ درج کرواکے مدرسے اور معلم کو بدنام کرنے کی سازش رچائی۔قاری عثمان نے آر پی او، سٹی پولیس آفیسر راولپنڈی سے مطالبہ کیا کہ اس واقعہ کی شفاف تحقیقات کرنے کے لیے جے آئی ٹی تشکیل دی جائے تاکہ اصل حقائق منظر عام پر آسکیں اور جھوٹا مقدمہ درج کرانے والے مدعی مقدمہ کیخلاف کاروائی کی جائے۔

Facebook Notice for EU! You need to login to view and post FB Comments!