fbpx

مسلم فورم نے ریاست کرناٹک میں صدارتی راج کا مطالبہ کردیا

بھارتی ریاست کرناٹک میں حجاب پر پابندی اور فرقہ وارانہ فسادات کا معاملہ سنگین صورتحال اختیار کرگیا

مسلم فورم نے ریاست کرناٹک میں صدارتی راج کا مطالبہ کردیا، مسلم فورم نے بھارت کے صدر رام ناتھ کووند کو خط لکھ دیا، خط میں ہندو انتہا پسند جماعتوں کی جانب سے نفرت انگیز بیانات کی نشاندہی کی،خط میں کہا گیا کہ ریاست کرناٹک میں مسلمان مخالف جذبات کو ہوا دی جارہی ہے،ریاست کرناٹک میں صدارتی راج نافذ کیا جائے،

قبل ازیں بھارتی ریاست کرناٹک کی حکومت نے لائوڈ اسپیکر وں کے استعمال پر مساجد سمیت تمام مذہبی مراکز کو نوٹس جاری کردیئے ہیں ریاست کرناٹک کے ضلع یادگیر کے 263مذہبی مراکز کو نوٹسز جاری کئے گئے ہیں جن میں مساجد، مندر اور گرجا گھر شامل ہیں۔ یادگیر کے سپرنٹنڈنٹ آف پولیس ویدامورتی نے میڈیا کو بتایا ہے کہ ضلع میں لائوڈ اسپیکروں کے استعمال پر مذہبی مراکز کو نوٹس جاری کئے گئے ہیں۔انہوں نے بتایا کہ یادگیر ضلع میں 115مساجدسمیت دیگر مذہبی مقامات کو نوٹس جاری کئے گئے ہیں اور انہیں لائوڈ اسپیکر کے استعمال سے متعلق سپریم کورٹ کے احکامات پر لازما عمل کرنے کی ہدایت کی گئی ہے بصورت دیگر ان کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی

دوسری جانب کرناٹک کے علاقے شیو گاما کے ایک تعلیمی ادارے میں باحجاب طالبات کی جانب سے کالج میں جانے کی اجازت نہ ملنے پر احتجاجی مظاہرہ کرنے پر کالج نے ایکشن لیا ہے اور کالج نے حجاب پہننے والی کم از کم 58 طالبات کے نام کالج سے خارج کر دیئے ہیں، بھارتی میڈیا کے مطابق جن طالبات کو نکالا گیا تو سرکاری کالج میں زیر تعلیم تھیں.پرنسپل کا کہنا تھا کہ ہم طالبات کو حجاب کے ساتھ آنے کی اجازت نہیں دے سکتے، طالبات سکول کے قوانین کو فالو کریں لیکن طالبات نے حجاب اتارنے سے انکار کیا اور بعد ازاں کالج کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا جس کے بعد کالج نے انکے نام خارج کر دیئے،طالبات کا کہنا ہے کہ سکول چھوڑ دیں گی لیکن حجاب نہیں اتاریں گی

 طالبات کے حجاب پہننے پر پابندی کے خلاف بھارتی نژاد امریکی مسلمانوں نے ٹیکساس کے شہر ہوسٹن میں احتجاج کیا

پولیس نے باحجاب خواتین پر ڈنڈے برسادیے، ویڈیو وائرل:حجاب ممنوع قراردینے کی سازشیں 

 کرناٹک میں ایک اورکالج نے طالبات کوحجاب کے ساتھ کالج کے اندرداخل نہیں ہونے دیا

 حجاب کے ساتھ امتحان دینے کی اجازت نہ ملنے پرکرناٹک کے سرکاری اسکول کی طالبات نے امتحانات کا بائیکاٹ کردیا

ایک نہ ایک دن باحجاب لڑکی ہی بھارت کی وزیر اعظم بنے گی۔

بھارت میں حجاب پر پابندی کے خلاف مجلس وحدت مسلمین کراچی، خواتین ونگ کی جانب سے کراچی پریس کلب پر احتجاج

"میرا حجاب میرا فخر”پاکستان کی بیٹوں کا مسکان کے ساتھ اظہاریکجہتی:ایمان افروزتقریبات

امریکا نے حجاب پرپابندی کومذہبی آزادی کی خلاف ورزی قراردے دیا

بھارت: وزیر تعلیم کامدھیہ پردیش میں بھی طالبات کےحجاب پر پابندی عائد کرنے کا عندیہ

بھارت میں حجاب پرپابندی کے خلاف احتجاج ، تعلیمی ادارے3 روز کے لئے بند

 مودی یاد رکھ حجاب مسلمان خواتین کا حق ہے:با حجاب طالبات پرحملوں کی مذمت کرتے ہیں

:بھارتی تعلیمی اداروں میں حجاب پر پابندی، ملالہ نےہندووں کی مذمت کی بجائے حمایت کردی 

ہندو انتہا پسندوں کی باحجاب نہتی مسلمان طالبہ کو ہراساں کرنے کی کوشش، لڑکی کے اللہ اکبر کے نعرے

رائٹرز کی رپورٹ کے مطابق بھارتی ریاست کرناٹکا میں پیش آنے والے واقعات نے اقلیتی برادری میں خوف پیدا کردیا ہے، جس کے بارے میں ان کا کہنا ہے کہ وزیراعظم نریندر مودی کی ہندو قوم پرست حکومت کے تحت ظلم میں اضافہ ہوا ہے۔

گرلز اسلامک آرگنائزیشن کرناٹکا کے صدر سمعیہ روشن نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا تھا کہ یہ فطری طور پر امتیازی سلوک ہے اور حقوق کے بھی خلاف ہے جو بھارت کے آئین نے طالبات دیے ہیں پابندی شخصی آزادی کی خلاف ورزی ہے جو طالبات کا حق ہے اور اس سے کسی دوسرے کو کوئی نقصان بھی نہیں ہوتا۔

بھارتی ریاست کرناٹک کے ایک اورسرکاری کالج میں باحجاب طالبات کوداخل ہونے سے روک دیا گیا۔

 بھارت میں مسلمانوں کی زندگیاں اجیرن ،طالبات پولیس کیڈٹ کے حجاب کرنے پرپابندی

گجرات کا "قصائی” مودی دہلی میں مسلمانوں پر حملے کا ذمہ دار ،بھارت کے اندر سے آوازیں اٹھنے لگیں

دہلی میں پولیس بھی ہندوانتہا پسندوں کی ساتھی، زخمی تڑپتے رہے، پولیس نے ایمبولینس نہ آنے دی

دہلی جل رہا تھا ،کیجریوال سو رہا تھا، مودی سن لے،ظلم و تشدد ہمیں نہیں ہٹا سکتا، شاہین باغ سے خواتین کا اعلان

دہلی میں ظلم کی انتہا، درندوں نے 19 سالہ نوجوان کے سر میں ڈرل مشین سے سوراخ کر دیا

دہلی تشدد ، خاموشی پرطلبا نے کیا کیجریوال کے گھر کا گھیراؤ، پولیس تشدد ،طلبا گرفتار

امریکا سمیت متعدد ممالک کی دہلی بارے سیکورٹی ایڈوائیزری جاری

دہلی فسادات، 42 سالہ معذور پر بھی مسجد میں کیا گیا بہیمانہ تشدد

دہلی فسادات کا ذمہ دار کون؟ جمعیت علماء ہند نے کی نشاندہی

دہلی فسادات اور 2002 کے گجرات فسادات میں گہری مماثلت،ہندوؤں کی دکانیں ،گھر کیوں محفوظ رہے؟ سوال اٹھ گئے

دہلی فسادات، کوریج کرنیوالے صحافیوں کی شناخت کیلیے اتروائی گئی انکی پینٹ

دہلی، اجیت دوول کا دورہ مسلمانوں کو مہنگا پڑا، ایک اور نوجوان کو مار دیا گیا

دہلی فسادات میں امت شاہ کی پرائیویٹ آرمی ملوث،یہ ہندوآبادی پر دھبہ ہیں، سوشل ایکٹوسٹ جاسمین

دہلی فسادات،مسلمان جی رہے ہیں خوف کے سائے میں، مذہبی شناخت چھپانے پر مجبور،خواتین نے حجاب اتار دیا

حجاب کیوں پہنا؟ طالبات کو سرکاری سکول میں داخل ہونے سے روک دیا گیا

گھونگھٹ ، جینز یا حجاب یہ فیصلہ کرنا خواتین کا حق ہے،مسکان کو خراج تحسین

بھارتی سپریم کورٹ کا حجاب کیس میں مداخلت سے انکار

حجاب پہنے اللہ اکبر کے نعرے لگانیوالی 10 طالبات پر مقدمہ درج

حجاب پہننا اسلام کا لازمی جزو نہیں،کرناٹک ہائیکورٹ کا حجاب پرپابندی برقراررکھنے کا حکم