fbpx

رضوان ہمارا بہترین خیال رکھیں گے،خاتون مداح کا محمد رضوان کو نگران وزیراعظم بنانے کا مطالبہ

قومی کرکٹر محمد رضوان کی خاتون مداح نے انہیں پاکستان کا نگران وزیر اعظم بنانے کا مطالبہ کردیا۔

باغی ٹی وی : گزشتہ روز پاکستان اور آسٹریلیا کے درمیان کھیلے گئے واحد ٹی ٹوئنٹی میچ کے دوران ایک خاتون تماشائی نے محمد رضوان کو ملک کا نگران وزیر اعظم بنانے کی درخواست کی۔


ٹوئٹر پر خاتون صارف کی جانب سے پلے کارڈ کی تصویر شیئر کی گئی جس میں لکھا تھا کہ ’رضوان کو نگران وزیر اعظم بنایا جائے۔

خاتون نے پلے کارڈ کی تصویر شیئر کرتے ہوئے اپنی ٹوئٹ میں یہ بھی لکھا کہ رضوان ہمارا بہترین خیال رکھیں گے۔


جس پر ایک ٹوئٹر صارف نے کہا کہ یہ سادہ لوح بندے کا کام نہیں-

آئین کی بیحرمتی قابل قبول نہیں:آئین سب سے مقدس اورمقدم:مریم نواز بول اٹھیں

واضح رہے کہا 3 اپریل کو قومی اسمبلی میں وزیراعظم کے خلاف اپوزیشن کی تحریک عدم اعتماد کو ڈپٹی اسپیکر قاسم سوری نے مسترد کر دیا تھا، جس کے بعد صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے وزیراعظم کی تجویز پر قومی اسمبلی تحلیل کرنے کی منظوری دے دی تھی جس کے بعد معاملہ سپریم کورٹ میں چلا گیا ہےسپریم کورٹ میں چیف جسٹس عمر عطا بندیال کی سربراہی میں 5 رکنی لارجر بینچ معاملے پر سماعت کر رہا ہے۔

دوسری جانب صدر مملکت نے نگراں حکومت کی تشکیل کے لیے وزیراعظم اور قائد حزب اختلاف کو خطوط بھی ارسال کر دیئےتھے و ز یراعظم عمران خان نے نگراں وزیراعظم کے لیے سابق چیف جسٹس گلزار احمد کا نام تجویز کیا تھا-

تاہم اپوزیشن جماعتیں آئین شکنی کے خلاف ایک بار پھر ایک ہو چکی ہے، وزیراعظم عمران خان کی خواہش ہے کہ نئے الیکشن ہوں اپوزیشن چاہتی ہے عدم اعتماد ہو، چھ ماہ ہماری حکومت چلے اسکے بعد پھر الیکشن ہوں، سپریم کورٹ میں کیس زیر سماعت ہے، دوسری جانب سیاسی جماعتوں نے بھی اجلاس طلب کر لئے ہیں

پنجاب اسمبلی اجلاس،آج ہو گا یا نہیں؟ کنفیوژن پیدا کر دی گئی

متحدہ اپوزیشن نےاپنا ہنگامی اجلاس آج طلب کر لیا جس کی صدارت پی ڈی ایم سربراہ مولانا فضل الرحمان کریں گے جلاس دوپہر ڈھائی بجے طلب کیا گیا ہے۔ اجلاس میں نگران وزیراعظم کےتقررسمیت سیاسی صورتحال پرغورکیا جائے گا

دوسری جانب وزیر اعظم عمران خان نے تحریک انصاف کی سیاسی کمیٹی کا اجلاس بنی گالہ میں دوپہر ایک بجے طلب کرلیا اجلاس میں آئندہ انتخابات کی تیاریوں کے حوالے سے مشاورت کی جائے گی جبکہ موجودہ سیاسی صورتحال میں آئندہ کی حکمت عملی پرغورہوگا وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ عوام ہمیشہ ملک کی خودمختاری اور جمہوریت کے محافظ ہوتے ہیں عوام ملکی سالمیت ،خودمختاری اورجمہوریت کے لیے اٹھ کھڑے ہوں، ملکی خودمختاری اور جمہوریت پر بیرونی طاقتوں نے مقامی سہولتکاروں کے ساتھ ملکر حملہ کیا-

اسلام آباد کا سیاسی موسم گرم،اجلاس طلب، اہم فیصلے متوقع