روس کا یوکرینی شہر لیووف پر میزائل حملہ،6 افراد ہلاک متعدد زخمی

0
69

ماسکو: روس نے یوکرین کے شہر لیووف پر میزائل داغے جس کے نتیجے میں میں ایک عمارت مکمل طور پر تباہ ہوگئی جب کہ 6 افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے۔

باغی ٹی وی : عالمی میڈیا کے مطابق یوکرین کا شہر لیووف یورپی یونین اور نیٹو رکن پولینڈ سے محض 70 کلومیٹر کی دوری پر ہےلیووف کے میئر نے حملے میں 6 افراد کی ہلاکت کی تصدیق کی ہے تاہم مرنے والوں کی شناخت ظاہر نہیں کی۔

یوکرین کو جدید ہتھیار فراہم کرنے پر روس کی امریکہ اور نیٹو کو دھمکی

روسی فوج نے دعویٰ کیا ہے کہ گزشتہ رات یوکرین کے کئی فوجی ٹھکانوں پر حملے کیے ہیں اور اسلحہ ڈپو تباہ کردیئے گئے جس میں ہلاکت بھی ہوئی۔

ادھر ماریوپول میں روسی فوج کے یوکرینی فوج کو ہتھیار ڈالنے کی مہلت ختم ہو رہی ہے تاہم یوکرینی صدر نے کہا ہے کہ ہمت نہیں ہاریں گے اور آخری دم تک لڑتے رہیں گے۔

یوکرین کے صدر ویلادیمیر زیلنسکی نے روس پر الزام عائد کیا ہے کہ وہ ڈونباس کے مشرقی علاقے کو تباہ کرنا چاہتا ہے جب کہ یوکرین کے ساحلی شہر ماریوپول میں موجود فورسز نے پیر کو اپنے حتمی دفاع کی تیاری کر لی ہے روس ماریو پول میں اپنی بڑی فتح کی جانب بڑھ رہا ہے لیکن یوکرین نے لڑنے اور شہر کا ہر صورت دفاع کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

برطانوی وزیراعظم بورس جانسن پر پابندی عائد کردی گئی

واضح رہے کہ روسی افواج نے اتوار کو ازوفسٹال سٹیل پلانٹ میں موجود یوکرینی فوجیوں کو ہتھیار ڈال کر خود کو حوالے کرنے کا الٹی میٹم دیا تھا دوسری جانب یوکرین کی حکومت نے ڈونباس کے شہریوں پر زور دیا ہے کہ وہ روسی جارحیت سے بچنے کے لیے مغربی علاقے میں منتقل ہو جائیں۔

یوکرین کے صدر زیلنسکی نے اتوار کی شام اپنے بیان میں کہا تھا کہ ’روسی فوجیں ہمارے ملک کے مشرقی علاقوں میں جلد جارحانہ کارروائی کرنے کا ارادہ رکھتی ہیں وہ حتمی طور پر ڈونباس کو تباہ کرنے کا منصوبہ بنا چکی ہیں۔

خیال رہے کہ روس کے یوکرین کے خلاف 26 فروری کو شروع ہونے والے ’خصوصی ملٹری آپریشن‘ کے بعد سے ماریوپول شہر نے غیرمتوقع طور پر سخت مزاحمت کا مظاہرہ کیا ہے۔

یوکرین کے کروزمیزائل حملے میں روسی بحری جنگی جہاز کونقصان

یوکرین کے وزیراعظم ڈینز شمیہال نے اے بی سی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ ’(ماریوپول)شہر پر ابھی تک قبضہ نہیں ہوا ہے۔ وہاں ابھی تک ہماری افواج موجود ہیں اور ہم آخری دم تک لڑیں گے ہم کسی بھی صورت ہتھیار نہیں ڈالیں گے گو کہ متعدد شہر اس وقت روسی فورسز کے محاصرے میں ہیں لیکن خیرسن کے علاوہ کسی بھی شہر پر مکمل قبضہ نہیں ہوا ہے جب کہ 900 سے زیادہ قصبوں اور شہروں کا کنٹرول یوکرینی فورسز نے واپس سنبھال لیا ہے۔

یوکرین میں امریکی اور نیٹو اسلحے سے لدی گاڑیاں جائز ہدف ہیں:روس کا اعلان

Leave a reply