fbpx

مسجد وزیر خان کیس: صبا قمر اور بلال سعید الزامات سے بری

لاہور: مسجد وزیر خان میں رقص کرنے کے مقدمے میں اداکارہ صبا قمر اور اداکار بلال سعید الزامات سے بری ہوگئے-

باغی ٹی وی : ایڈیشنل سیشن جج محمود مشتاق نے اداکارہ صبا قمر اور بلال سعید کو مسجد میں رقص کرکے تقدس پامال کرنے کے الزامات سے بری کیا۔

اداکارہ صبا قمر اور بلال سعید نے بریت کی درخواستیں دائر کی تھیں، ایڈیشنل سیشن جج نے بریت کی درخواستیں منظور کرتے ہوئے الزامات سے بری کر دیا ملزمان کی جانب سے بریت کی دوسری درخواست سیشن کورٹ میں دائر کی گئی تھی قبل ازیں مجسٹریٹ کے پاس دائر بریت کی درخواست مسترد ہوگئی تھی۔

اداکارہ اور گلوکار پر مسجد وزیر خان میں رقص کر کے مسجد کا تقدس پامال کرنے کا الزام تھا جس پر انہوں نے مقدمے سے بریت کی درخواست دائر کی تھی۔

پاکستانی فلموں کی ریلیز کا معاملہ :جاوید شیخ کا وزیر اعظم سے معاملے پر ایکشن لینے کا مطالبہ

درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا تھا کہ ہمیں بلیک میل کرنے کے لیے جھوٹا اور بے بنیاد مقدمہ درج کروایا گیا، مسجد وزیر خان میں رقص کا کوئی بھی منظر عکس بند نہیں کروایا گیا گانا ’قبول ہے‘ کی عکس بندی کی اجازت محکمہ اوقاف سے لی گئی تھی، مسجد وزیر خان میں عکس بندی کے موقع کے کسی گواہ نے شکایت نہیں کی۔

درخواست میں مزید کہا گیا کہ مدعی مقدمہ سردار فرحت منظور چانڈیو ایڈووکیٹ موقع کے گواہ نہیں ہیں، ان کے پاس صبا قمر اور بلال سعید کے خلاف مسجد کی حرمت پامال کرنے کا کوئی ثبوت بھی موجود نہیں ہے۔

خیال رہے کہ لاہور پولیس نے 14 اگست 2020 کو عدالتی حکم پر گلوکار بلال سعید اور اداکارہ صبا قمر کے خلاف مسجد کا ’تقدس پامال‘ کرنے کا مقدمہ دائر کیا تھا دونوں کے خلاف لاہور کے اکبری گیٹ تھانے میں سیشن کورٹ کے حکم کے بعد ایڈووکیٹ سردار منظور چانڈیو کی مدعیت میں مقدمہ دائر کیا گیا تھابلال سعید اور صبا قمر کے خلاف سیشن کورٹ کے حکم پر تعزیرات پاکستان کی دفعہ 295 پ کے تحت مقدمہ درج کیا گیا تھا۔

وقت آنے پر عامر لیاقت کے خلاف سارے ثبوت سامنے لاؤں گی ،دانیہ شاہ

مقدمے میں دونوں پر الزام لگایا گیا تھا کہ انہوں نے اپنے گانے ’قبول ہے‘ کی ویڈیو میں مسجد کا ’تقدس پامال‘ کیا اور ان کے گانے کی ویڈیوز اور تصاویر سوشل میڈیا پر وائرل ہوئیں، جس سے لوگوں کے جذبات مجروح ہوئے بلال سعید اور صبا قمبر سمیت مسجد کے ’تقدس پامال‘ کرنے میں مسجد انتظامیہ اور محکمہ اوقاف کے جتنے بھی ملازمین ملوث ہیں، ان کے خلاف سخت کارروائی کی جائے تاکہ آئندہ کوئی بھی ایسا کام نہ کرے۔

واضح رہے کہ بلال سعید اور صبا قمر کا گانا ’قبول ہے‘ 11 اگست کو ہی ریلیز ہوا تھا ، جس میں لاہور کی تاریخی مسجد وزیر خان میں فلمائے گئے مناظر شامل نہیں کیے گئے تھے تاہم اس سے قبل گانے کا ایک مختصر ٹیزر جاری کیا گیا تھا، جس میں دونوں کو مسجد وزیر خان میں نکاح کی رسم ادا کرتے ہوئے دکھایا گیا تھا۔

مقدمے کے اندراج کے بعد 8 ستمبر 2021 کو لاہور کے جوڈیشل مجسٹریٹ نے عدالت میں پیش نہ ہونے پر مسجد کا ’تقدس پامال‘ کرنے کے کیس میں گلوکار بلال سعید اور اداکارہ صبا قمر کے وارنٹ گرفتاری جاری کیے تھے ساتھ ہی میں دونوں کو گرفتاری سے بچنے کے لیے 30 ہزار روپے کے ضمانتی مچلکے جمع کروانے کی ہدایت بھی کی تاہم بعد ازاں وارنٹ گرفتاری منسوخ کردیئے گئے تھے۔

دانیہ شاہ کے الزامات پر عامر لیاقت کا ردعمل