fbpx

سابق آسٹریلوی ٹیسٹ کرکٹر کی اغوا کے بعد رہائی

سابق آسٹریلوی ٹیسٹ کرکٹر کی اغوا کے بعد رہائی

سابق آسٹریلیائی ٹیسٹ کرکٹر اسٹورٹ میک گل کو سڈنی میں واقع اپنے گھر سے اغوا کیا گیا تھا اور تاوان کے الزام میں رکھا گیا تھا۔ بدھ کو مقامی میڈیا نے بتایا کہ اسے ایک گھنٹے بعد رہا کیا گیا۔ پولیس نے بتایا کہ اس واقعے میں اسے معمولی چوٹیں آئیں لیکن انہیں طبی امداد کی ضرورت نہیں تھی۔

یہ واقعہ گذشتہ ماہ 14 اپریل کو شہر کے لوئر شمالی ساحل میں پیش آیا تھا۔ تاہم سابق کرکٹر کے مسلح اغوا کے سلسلے میں چار افراد کو حراست میں لیا گیا ہے۔ ان افراد کو صبح سویرے چھاپے میں گرفتار کیا گیا تھا۔

پولیس کے مطابق ، دو ہفتوں کی طویل تفتیش کے بعد ان افراد کوگرفتار کیا گیا تھا ، پولیس نے بتایا ، کرکٹر کو پھر شہر کے مضافات میں لے جایا گیا ، جہاں اس پر بندوق کی نوک پر مبینہ طور پر حملہ کیا گیا تھا اور ایک گھنٹے بعد اسے رہا کردیا گیا تھا۔گرفتار گروپ کے ممبران کی عمر 27 ، 29 ، 42 اور 46 سال ہے اور قانون کے مطابق ان پر عائد کیا جائے گا۔ادھر ، حکام نے ابھی تک ان کی موجودہ حالت کے بارے میں تفصیلات فراہم نہیں کیں۔

حکام نے بتایا کہ حملے کے دوران کوئی رقم حوالے نہیں کی گئی اور نہ ہی حاصل کی گئی ہے ، میک گل نے اس واقعے کے ایک ہفتے بعد حکام کو جرم کی اطلاع دی تھی ، اور وہ اپنی اور اپنے خاندان کی حفاظت کے حوالہ سے پریشان تھا۔ وہ پریشان تھے اسلئے پولیس کے پاس نہیں گئے،

کرکٹر نے پولیس کو بتایا کہ اس پر تشدد کیا گیا، دھمکی دی گئی، اسلحہ دکھایا گیا تا ہم تاوان کا کہیں بھی مطالبہ نہین کیا گیا،پولیس کو تاخیر سے اطلاع دینے کی وجہ ڈر تھی،یہ بھی اطلاعات ہیں کہ پیسوں کے لئے ہی اسے اغوا کیا گیا تھا کرکٹر نے بہت لوگوں کا قرض دینا ہے اور ممکن ہے اغواکاروں نے بھی پیسے لینے ہوں‌تا ہم اب یہ بات تحقیقات میں سامنے آئے گی،پولیس نے ابھی تک اس پر تبصرہ کرنے سے انکار کیا ہے

اسٹورٹ میک گیل آسٹریلیائی کرکٹ ٹیم کے ٹیسٹ اسپنر ہیں جنہوں نے 1988 سے 2008 کے درمیان 44 ٹیسٹ میچوں میں 208 وکٹیں حاصل کیں۔کرکٹر نے کچھ عمدہ پرفارمنس پیش کیں اور اپنے کیریئر میں وہ مختلف ٹیموں کے اسپن بولنگ کوچ کی حیثیت سے کھیلے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.