fbpx

سابق چیف جسٹس کے بیٹے پر حملہ

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق سابق چیف جسٹس آف پاکستان سعید الزماں صدیقی کے صاحبزادے بیرسٹر افنان سعید پر حملہ ہوا ہے

ملزمان خیابان راحت کے فیز 6 میں واقعہ بنگلے پر فائرنگ کر کے فرار ہو گئے تھے فائرنگ کا واقعہ رات ایک بج کر 17 منٹ پر پیش آیا افنان سعید کا کہنا ہے کہ مجھے میرا دوست گھر چھوڑنے کیلئے آیا تھا ، ہم جیسے ہی گھر کے اندر داخل ہوئے تو ملزمان نے گھر پرفائرنگ کر دی ، میرے ملازم نے مجھے بچانے کیلئے چھلانگ لگائی اور زمین پر گرا فائرنگ کے بعد گولیاں گھر کی دیوار پر لگیں ۔ ملزمان گھر پر فائرنگ کر نے کے بعد فرار ہو گئے

نجی اخبار کے مطابق افنان سعید کا کہنا تھا کہ اندر موجودمیرے پولیس اہلکار کی جانب سے سرکاری اسلحہ سے گولی چلائی گئی تو ملزمان خالی پلاٹ کی جانب بھاگ گئے ، میرا عرفان اللہ کنڈی نامی شخص سے بھی 2018 سے تنازع چل رہاہے ، عرفان اللہ کنڈی نے مری میں میری والدہ پر بھی حملہ کروایا تھا ۔

پولیس کا کہناہے کہ رات کو خبر موصول ہوتے ہی پولیس فوری طور پر افنان سعید کے گھر پہنچی لیکن افنان سعید کی جانب سے تاحال واقعہ کا مقدمہ درج نہیں کروایا گیاہے ، جب ہمیں کہیں گے تو فوری مقدمہ درج کر لیا جائے گا ۔

واضح رہے کہ 2018 میں بھی ایک ایسا ہی واقعہ پیش آیا تھا سابق چیف جسٹس پاکستان سعیدالزمان صدیقی کی اہلیہ پر جوڈیشل کالونی میں فائرنگ کی گئی تھی جس میں وہ محفوظ رہی تھیں،فائرنگ پلاٹ کے تنازع پر کی گئی تھی، پولیس کو دی گئی درخواست میں کہا گیا تھا کہ ملزمان نے میری والدہ سمیت 3افراد کو حبس بے جا میں بھی رکھا سعید الزماں صدیقی کے بیٹے بیرسٹر افنان سید عظمیٰ نے پولیس کو تحریری درخواست دی تھی

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.