صدر مملکت کی ای او بی آئی کو سیکیورٹی گارڈ سے معافی مانگنے کی ہدایت

0
52
Arif Alvi

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے ای او بی آئی کو سیکیورٹی گارڈ سے معافی مانگنے کی ہدایت کر دی

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کا کہنا تھا کہ پاکستان کے صدر کی حیثیت سے شہری سے معافی مانگتا ہوں، پنشن کے حصول کیلئے سیکورٹی گارڈ کو دفترکے احاطے میں داخلے کی اجازت تک نہیں دی گئی ،ایمپلائز اولڈ ایج بینیفٹ انسٹی ٹیوشن اپنے غریب مخالف اور غیر دوستانہ طرز عمل پر گہری نظر ڈالے ،ایک عام مزدور کو پنشن کیلئے برسوں انتظار کروانا شرمناک امر ہے ، شکایت کنندہ کی فائل گم ہونے کی وجہ سے سال بیت گئے، فائل سفارش کروانے پر ڈھونڈی گئی،

صدر مملکت نے وفاقی محتسب کے فیصلے کے خلاف ای او بی آئی کی درخواست پر فیصلہ کیا،سیکیورٹی گارڈ ، افتخار حسین ، ایک پرائیویٹ سیکیورٹی ایجنسی میں کام کرتے تھے ،افتخار حسین 2008 ء میں سروس کے دوران حادثے میں معذور ہوگئے تھے ، سیکورٹی گارڈ افتخار حسین نے پنشن کیلئے ای او بی آئی سے رجوع کیا،ای او بی آئی نے پنشن گرانٹ کی ادائیگی سے انکار کیا،ادارے کا موقف تھا کہ افتخار حسین کی مدت ِ ملازمت 15 سال سے کم ہے ، صرف اولڈ ایج گرانٹ کے حقدار ہیں،ریٹائرڈ سیکورٹی گارڈ نے وفاقی محتسب سے رابطہ کیا، جس نے ادارے کو کیس پر غور کرنے کی ہدایت کی،محتسب کے فیصلے کے خلاف ای او بی آئی نے صدر مملکت کو اپیل دائر کی ، جسے صدر نے نمٹا دیا،

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کا کہنا تھا کہ ایک عام مزدور (سیکیورٹی گارڈ) کو انصاف کی تلاش میں برسوں گزارنے پڑے، مایوسی ہوئی کہ گارڈ کیس کی پیروی کیلئے دفتر گیا تو داخلہ تک نہ ملا،ایک ریٹائرڈ افسر کی مداخلت کے بعد شہری کو احاطے میں داخلہ دیا گیا،کیس کی سماعت کے دوران ادارے کے نمائندے نے یقین دہانی کرائی کہ شکایت پر قانون کے مطابق غور کیا جائے گا، معاملہ ادارے کے چیئرمین کے بجائے ادارے کی اتھارٹی کے سامنے پیش کیا جائے

جی ایچ کیو حملے میں پی ٹی آئی خواتین رہنماوں کا کردار,تحریک انصاف کی صوبائی رکن فرح کی آڈیو سامنے آئی ہے،

جناح ہاؤس لاہور میں ہونیوالے شرپسندوں کے حملے کے بارے میں اہم انکشافات

سیاسی مفادات کے لئے ملک کونقصان نہیں پہنچانا چاہئے

غیر ملکی سفارت خانوں نے اپنے شہریوں کو محتاط رہنے کی ہدایت کر دی 

جناح ہاؤس میں سب سے پہلے داخل ہونے والا دہشتگرد عمران محبوب اسلام آباد سے گرفتار 

عدالت نے خدیجہ شاہ کے جسمانی ریمانڈ کی استدعا کو مسترد کردیا

Leave a reply