fbpx

صدر مذاکرات میں کردار ادا نہیں کرسکتے ہیں،کوئی ادارہ دوسرے ادارے میں مداخلت نہیں کرے گا،سینیٹر میاں رضا ربانی

اسلام آباد: پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما اور سابق چیئرمین سینیٹ سینیٹر میاں رضا ربانی نے کہا ہے کہ صدر مذاکرات میں کردار ادا نہیں کرسکتے ہیں-

باغی ٹی وی : سینیٹ میں خطاب کرتے ہوئے سینیٹر میاں رضا ربانی نے کہا کہ ایک شخص جس کا آئین میں کوئی کردار نہیں ہے وہ اپنا کردار تلاش کر رہا ہے، کوئی ادارہ دوسرے ادارے میں مداخلت نہیں کرے گا اور اپنی آئینی حدود میں رہے گا۔

ٹرانس جینڈر ایکٹ میں ترمیم پر غور کیا جارہا ہے. چیئرمین سینیٹ

میاں رضا ربانی نے سینیٹر سیف اللہ نیازی کے ساتھ پیش آنے والے واقعے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ سیف اللہ نیازی رکن سینیٹ اور پاکستانی شہری ہیں انہیں بنیادی حقوق حاصل ہیں، بغیرخواتین اہلکاروں کے گھر میں داخل ہوئے، جو قابل مذمت ہےاپوزیشن کی گفتگو میں 26 سال میں فرق نہیں آیا ہے۔

سابق چیئرمین سینیٹ سینیٹر میاں رضا ربانی نے کہا کہ وزیراعظم کا عدالتی قتل ہوا، یہ تاریخ کا حصہ ہے، منتخب وزیر اعظم کو ہتھکڑی لگا کر جہاز میں بند کیا گیا، بے نظیر بھٹو کو قتل کرکے زمین کو دھو دیا گیا۔

انہوں نے خبردار کرتے ہوئے کہا کہ وفاق ایسے تجربے کو مزید برداست نہیں کر سکتا، ہم نے فوری اصلاح نہیں کی تو تباہی کے سوا کچھ نہیں ہے سانہوں نے تجویز پیش کی کہ سینیٹ میں پورے ایوان پر مشتمل کمیٹی کا اجلاس بلایا جائے۔

قبل ازیں سینیٹر سیف اللہ سرور خان نیازی کی جانب سے ایف آئی اے اور اسلام آباد پولیس کے خلاف ان کے گھر پر چھاپہ مارنے اور ان کی اہلیہ و بیٹیوں کو ہراساں کرنے کیخلاف تحریک التواء پیش کی گئی تھی تحریک استحقاق پر کمیٹی نے غور کیا۔

چیئرمین کمیٹی سینیٹر طاہر بزنجو نے اس فعل کی سخت ترین الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے پولیٹیکل وکٹمائزیشن کے اس چکر کو ختم کرنے کی ضرورت پر زور دیا تھا

انہوں نے کہا تھا کہ کسی بھی عوامی نمائندے کے خلاف بدنیتی پر مبنی سرگرمی نہیں ہونی چاہئے، یہ استحقاق کی سنگین خلاف ورزی تھی۔ کمیٹی چیئرمین کے مؤقف سے تمام اراکین نے اتفاق کیا تھا-

واضح رہے کہ رواں ماہ سینیٹر سیف اللہ نیازی کے گھر وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) نے چھاپہ مارا تھا دوسری جانب ایف آئی اے کی طرف سے جاری بیان میں کہا گیا تھا کہ ایف آئی اے سائبر کرائم ونگ اسلام آباد نے سینٹر سیف الله نیازی کے گھر اور آئی نائن ٹو میں ایک دفتر پر باقائدہ سرچ وارنٹ لیکر چھاپہ مارا۔

بیان میں کہا گیا تھا کہ سینٹر سیف نیازی کے گھر سے لیپ ٹاپ، فون اور دیگر سامان ضبط کرلیا،آئی نائن ٹو میں میسرزٹائیل ماوٹین کے آفتاب احمد جان،بلال خان اور چودھری محمد اقبال اور سیف الله نیازی نامنظور ڈاٹ کام نامی ویب سائٹ آپریٹ کررہے تھے،ویب سائٹ کو غیرقانونی طور پر فنڈز اکھٹا کرنے کے لیے استعمال کیا جارتھا جوڈیشل مجسٹریٹ اسلام آباد سے سرچ و الیکڑانک ڈیوائس تحویل میں لینے کی اجازت بھی حاصل کی تھی-

اسحاق ڈار پاکستان پہنچ گئے