fbpx

صادق آباد:اندھڑ گینگ کے مظالم کی ایک اورداستان،9 افراد کے قتل کے بعد کماد کو بھی آگ لگا دی

صادق آباد :صادق آباد:اندھڑ گینگ کے مظالم کی ایک اورداستان،9 افراد کے قتل کے بعد کماد کو بھی آگ لگا دی ،اطلاعات کے مطابق سرکل صادق آباد پولیس کچھ نہ کرسکی اندھڑ گینگ نے سانحہ ماہی چوک کے نو مقتولین کے ورثا کے کماد کو جانو اندھڑ گینگ نے آگ لگادی

صادق آباد سے باغی ٹی وی ذرائع کے مطابق اندھڑ گینگ کے مسلح افراد موقع پر موجود ہیں پولیس کو اطلاع کی مگر ابھی تک نہیں آئی

اطلاعات میں یہ بھی بتایا گیا ہے کہ اندھڑ گینگ کے مسلح لوگ بندوق کی نوک پرکماد کوجلاتے رہے مگرپولیس اطلاع ملنے کے باوجود جان بوجھ کروہاں آخری وقت تک نہیں آئی تھی

 

 

دوسری طرف یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ علاقے میں خوف کی فضا ہے اورلوگ شام ہوتےہی اپنے گھروں میں محصور ہوگئے ہیں

یاد رہے کہ چند دن پہلے ضلع رحیم یار خان کی تحصیل صادق آباد میں قتل و غارت گری کا ہولناک واقعہ پیش آیا ، جہاں جانو اندھڑ گینگ کے کارندوں کی فائرنگ سے 9افراد جاں بحق ہو گئے تھے۔

قاتل گروپ کے کارندے آدھے گھنٹے تک فائرنگ کرتے رہے ،انسان تڑپتے رہے مگر صرف پانچ سو میٹر دور چیک پوسٹ پر موجود پولیس اہلکار ٹس سے مس نہ ہوئے ،واقعے کا وزیراعلیٰ پنجاب نے نوٹس لیا جبکہ مقامی تاجر آج اس واقعہ کے خلاف شٹر ڈاؤن ہڑتال بھی کررہے ہیں۔

 

 

 

تحصیل صادق آباد قاتل گینگز کا گڑھ بن چکی ہے ،اس شہر میں دولانی گینگ ،شر گینگ ، لُنڈ گینگ اور اندھڑ گینگ کے کارندے جسے چاہیں جب چاہیں اور جہاں چاہیں گولیوں کا نشانہ بناتے ہیں جبکہ پولیس بے بس دکھائی دیتی ہے۔

واضح رہے کہ اندھڑ گینگ کے کارندوں نے گزشتہ روز دوپہر تین بجکر دس منٹ پر ظلم کی انتہا کرتے ہوئے صادق آباد کے علاقے ماہی چوک میں مقامی تاجر ظہیر احمد کو اُس کے خاندان کے افراد سمیت بے دردی کے ساتھ قتل کردیا تھا ،

اندھڑ گینگ کے تین افراد نے پہلے پٹرول پمپ پر موجود افراد کو موت کے گھاٹ اتارا،پھر پٹرول پمپ سے ملحق سیڈ کمپنی میں گھس گئے اورا ندھا دھند فائرنگ کرکے مزید 6افراد کو ابدی نیند سلا دیا جبکہ ایک شہری بھی فائرنگ کی زد میں آ کر جاں بحق ہو گیا

Facebook Notice for EU! You need to login to view and post FB Comments!