fbpx

سگے بھائی اور بھابھی پر ظلم

قصور
چھانگا مانگا کوٹ اودھم سنگھ میں سگے بھائیوں کا بھائی اور بھابھی پر تشدد
تفصیلات کے مطابق چھانگا مانگا کے گاؤں اودھم سنگھ کا رہائشی محمد علی قوم راجپوت اپنے وراثتی مکان میں رہتا تھا جسے اس کے سگے بھائی کاشف اور تاج دین ڈراتے دھمکاتے تھے کہ ہم تمہیں حصہ لینے نہیں دینگے جس کی بناء پر روز جھگڑا رہتا تھا جس کی بدولت محمد علی اپنی بیوی رضیہ بی بی اور بچوں کو لے کر اپنے سسرال گجرانوالا رہنے لگا جبکہ اپنی زوجہ کا جہیز کا سامان اپنے وراثتی مکان میں ہی رہنے دیا کل دونوں میاں بیوی گجرانوالا سے اپنے گھر پہنچے تو انہیں گھر میں دیکھتے ہی کاشف اور تاج دین نے گالیاں دینی شروع کر دیں جس پر اہل محلہ نے خاموش کروایا مگر 5 منٹ بعد ہی دونوں بھائیوں نے اپنی بھابھی رضیہ بی بی اور بھائی محمد علی کو مارنا شروع کر دیا جس سے رضیہ بی بی بے ہوش ہو گئی رضیہ بی بی کے گال پر نشان پڑ گئے 15 منٹ بعد رضیہ بی بی ہوش میں آئی تو ہمراہ اپنے شوہر تھانہ چھانگا مانگا پہنچی جہاں اس نے اپنے حقیقی دیوروں کے خلاف درخواست دی جس پولیس درج کرکے جلد کاروائی کا وعدہ کیا ہے
رضیہ بی بی کی ڈی پی او قصور اور ایس ایچ اور چھانگا مانگا سے استدعا ہے کہ مجھے اور میرے خاوند کو قتل کی دھمکیاں دی جا رہی ہے لہذہ ملزمان کو پکڑ کر قانونی کاروائی کی جائے