مسئلہ کشمیر پر سلامتی کونسل کا اجلاس آج ہوگا، بھارت پریشان

انتہا پسند بھارتی حکومت کی جانب سے مقبوضہ کشمیر کی حیثیت تبدیل کرنے کے غیر آئینی اقدام پر غور کرنے کے لئے اقوامِ متحدہ کی سلامتی کونسل کا اجلاس بند کمرے میں ہو گا۔50 سال بعد سلامتی کونسل میں کشمیر کا مسئلہ اقوام متحدہ میں اٹھایا جارہا ہے..

سفارتی ذرائع کے مطابق سلامتی کونسل کا اجلاس آج جمعہ کے روز پاکستانی وقت کے مطابق شام 7 بجے شروع ہو گا۔
پاکستان نے سلامتی کونسل کے اجلاس کیلئے گزشتہ پیر کو مطالبہ کیا تھا جب اقوام متحدہ میں پاکستان کی سفیر ملیحہ لودھی نے وزارت خارجہ کی جانب سے لکھا گیا خط سلامتی کو نسل کی صدر کوپیش کیا۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ پاکستان تنازعہ کشمیر کے پرامن حل کے حق میں ہے اور اس کے لیے پاکستان نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں یہ مسئلہ اٹھایا ہے اور پرامن حل کیلئے جدوجہد بھی کرے گا۔ انہوں نے واضح کیا کہ بھارت اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے اجلاس کی مخالفت کر رہا ہے تاہم بین الاقوامی برادری کے ایک بڑا حصہ کشمیریوں کی نسل کشی کی نریندر مودی کی سوچ کی حقیقت سے آگاہ ہو چکا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بھارت نے پوری مقبوضہ وادی جموں و کشمیر کو جیل میں تبدیل کر دیا ہے جہاں پر اطلاعات تک رسائی ناممکن بنا دی گئی ہے۔ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ مسلم امہ اسلامی تعاون تنظیم (او آئی سی) کی جانب دیکھ رہی ہے تاکہ وہ آگے بڑھے اور معصوم کشمیریوں کی مدد کرے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کے عوام اور مسلح افواج پوری طرح مسئلہ کشمیر پر متحد ہیں۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.