ورلڈ ہیڈر ایڈ

سمیع ابراہیم کو تھپڑ کیوں‌ مارا؟ فواد چوہدری کے ترجمان کا وضاحتی بیان بھی آ گیا

وفاقی وزیربرائے سائنس و ٹیکنالوجی فواد چوہدری کے ترجمان کی طرف سے بھی سمیع ابراہیم کو تھپڑ مارنے کی وضاحت سامنے آگئی. ان کا کہنا ہے کہ صحافی سمیع ابراہیم کے ساتھ تنازع کو دو اداروں کی بجائے دو افراد میں تصور کرنا چاہیے۔

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق فواد چوہدری کے ترجمان کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ فواد چوہدری اور سمیع ابراہیم کے مابین پیش آنے والے واقعے کو دو اداروں میں تصادم سمجھنے کے بجائے اسے دو شخصیات کے درمیان تنازع تصور کرنا چاہیے. ایک شخص نے دوسرے شخص کی عزت نفس کو مجروح کرنے کی کوشش کی تو متاثر ہونے والے شخص نے اس کا ردعمل دیا۔

سمیع ابراہیم نے فواد چوہدری سے متعلق ذرائع کے حوالہ سے خبر دی تھی کہ ان کے پیپلز پارٹی سے رابطے ہیں اور وہ تحریک انصاف کے اندر گروپ بنا رہے ہیں‌ جس کے بعد سے فواد چوہدری اور سمیع ابراہیم کے خلاف سوشل میڈیا پر سخت بیان بازی کا سلسلہ جاری تھا. گزشتہ روز فیصل آباد میں شادی کی تقریب میں‌ فواد چوہدری نے سمیع ابراہیم کو تھپڑا مارا جس کی مذمت کئے جانے پر فواد چوہدری کا حالیہ بیان سامنے آیا ہے. فواد چوہدری کے ترجمان نے یہ بھی کہا ہے کہ کسی محب وطن پاکستانی اور حکومتی عہدیدار کو ’را‘ یا یہودیوں کا ایجنٹ کہنا اخلاقی اور صحافتی اقدار کے منافی ہے. فواد چوہدری کی جانب سے سمیع ابراہیم کو تھپڑ مارے جانے کیخلاف احتجاج کرنے کے ساتھ ساتھ سمیع ابراہیم سے بھی پوچھنا چاہئے کہ انہوں نے ایک محب وطن پاکستانی کی عزت نفس جو کہ ہر پاکستانی کا آئینی حق ہے کو کیوں پامال کیا؟

واضح رہے کہ سمیع ابراہیم کو تھپڑ مارے جانے کے خلاف ملک بھر کی صحافی برادری سراپا احتجاج ہے.

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.