fbpx

سموگ کے تدارک کے لئے لاہور ہائیکورٹ نے حکومت سے کیا پوچھ لیا؟

سموگ کے تدارک کے لئے لاہور ہائیکورٹ نے حکومت سے کیا پوچھ لیا؟

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق لاہورہائیکورٹ میں سموگ کے تدارک اورماحولیاتی آلودگی کے خاتمے کیلئے درخواستو ں پر سماعت ہوئی، چیف جسٹس ہائیکورٹ کی سربراہی میں بنچ نے سماعت کی ۔

چیف جسٹس مامون رشید شیخ نے استفسار کیا کہ سموگ کی ابترصورتحال پر کیا کارروائی ہوئی ہے ؟سرکاری وکیل نے کہا کہ عالمی معیار کے مطابق ماحولیاتی تبدیلیوں پر کمیٹی تشکیل دیدی گئی ہے ، چیف جسٹس ہائیکورٹ نے استفسار کیا کہ گرین بیلٹس کیلئے کیا اقدامات کئے گئے ؟،آلودگی کے خاتمے کیلئے درخت لگانے کیلئے کیااقدامات کئے گئے ؟

عدالت نے رنگ روڈ پر درخت نہ لگانے پر تشویش کا اظہار کیا ،عدالت نے شہر کے ماسٹرپلان میں درخت لگانے کیلئے کیا پالیسی ہے ؟ چیف جسٹس مامون رشید شیخ نے استفسار کیاکہ لاہور میں کھلی ڈرینزکوٹھیک کیوں نہیں کیا جارہا؟،عدالت نے کہا کہ واساکھلے مین ہولزمیں بچوں کے گرنے واقعات روکنے پر کام کرے ،واسا نہر میں آلودہ پانی کی مقدار معلوم کرنے کیلئے نمونے لے کر ٹیسٹ کرے .

لاہورہائیکورٹ نے گرین بیلٹس سے متعلق رپورٹ طلب کرلی۔

وکیل درخواستگزار نے کہا کہ پرانی گاڑیوں کو فٹنس پر پورا نہ اترنے پر چلانے کے لیے بین کر دیا جائے ۔جس پر عدالت نے کہا کہ موٹر وہیکل قانون اس کی اجازت نہین دیتا ۔عدالت میں سموگ کی روک تھام کے لیے صوبائی کابینہ کی ہونے والی میٹنگ منیٹس کی بابت رپورٹ پیش کر دی گئی عدالت نے کابینہ کمیٹی کی رپورٹ پر حکومتی محکموں کو عمل درآمد کرکے رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت کر دی .

عدالتی احکامات پر عمل درآمد نہ کرنے پر عدالت نے برہمی کا اظہار کیا اور عدالت نے محکموں کو سموگ کی بابت کئے گئے اقدامات کی پراگرس ویب سائٹ پر اپ لوڈ کرنے کی بھی ہدایت کر دی عدالت نے روزانہ کی بنیاد پر پراگرس رپورٹ اپ لوڈ کرنے کا حکم دے دیا ۔