ڈپٹی پراسیکیوٹر جنرل نیب سردار مظفر عباسی پر قاتلانہ حملہ، چیئرمین نیب کا سخت نوٹس

وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں ڈپٹی پراسیکیوٹر جنرل نیب سردار مظفر عباسی پر قاتلانہ حملہ کیا گیا ہے تاہم وہ محفوظ رہے، ادھر چیئر مین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال نے ڈپٹی پراسکیوٹر نیب سردار مظفر عباسی پر قاتلانہ حملے کی شدید مذمت کرتے ہوئےکہا ہے کہ ایسے بزدلانہ حملے نیب افسران کے حوصلے کمزور نہیں کرسکتے،

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق سردار مظفر عباسی پر اسلام آباد کے سیکٹر آئی 8 میں اس وقت حملہ کیا گیا جب وہ اپنے بھائی اور بیٹے کے ساتھ واک کر رہے تھے، اس دوران نامعلوم حملہ آور کی طرف سے چلائی جانے والی گولی ان کے سر کے قریب سے گزر گئی اور وہ اس حملے میں خوش قسمتی سے محفوظ رہے، نیب پراسیکیوٹر سردار مظفر عباسی کا کہنا ہے کہ وہ بھائی اور بیٹے کے ساتھ گلی میں واک کر رہے تھے کہ اس موقع پر انہیں فائرنگ کی آواز آئی تاہم انہوں نے کسی کو فائرنگ کرتے ہوئے نہیں دیکھا، مقامی پولیس کا کہنا ہے کہ وہ شواہد جمع کر کے اس معاملے کی تفتیش کر رہی ہے،

چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال نے ڈپٹی پراسکیوٹر جنرل نیب سردار مظفر عباسی پر قاتلانہ حملے کی شدید مذمت کی اور سخت نوٹس لیتے ہوئے آئی جی اسلام آباد کو ان کی سکیورٹی مزید سخت کرنے کی ہدایت کی ہے ، چیئرمین نیب کا کہنا تھاکہ ایسے بزدلانہ حملے نیب افسران کے حوصلے پست نہیں کرسکتے، وہ ایمانداری سے کرپشن اور بدعنوانی ختم کرنے کیلئے کوشاں رہیں گے،

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.