fbpx

یو اے ای:سرکاری ملازمین کوذاتی کاروبارکیلئےایک سال کی تنخواہ اورچھٹیاں دینےکا اعلان

ابو ظہبی: متحدہ عرب امارات نے سرکاری ملازمین کو ذاتی کاروبار کرنے کے لیے ایک سال کی تنخواہ کے ساتھ چھٹی دینے کا اعلان کردیا۔

باغی ٹی وی : امارت کی خبر ایجنسی کے مطابق وفاقی اتھارٹی برائے سرکاری انسانی وسائل کے مطابق حکومت نے وفاقی اداروں کے سرکاری ملازمین کو ذاتی کاروبار شروع کرنے کے لیے تنخواہ کے ساتھ ایک سال کی چھٹی دینے کا فیصلہ کیا ہے۔ فیصلے کا اطلاق 2 جنوری 2023 سے نافذ العمل ہوگا۔

امریکی سپریم کورٹ کا ڈونلڈ ٹرمپ کےدورمیں متعارف کرائی گئی تبدیلی کومسترد…

چھٹی حاصل کرنے والے ملازم کو اپنی سالانہ چھٹی اور بغیر تنخواہ چھٹی کو بھی اس میں شامل کروانے کا اختیار حاصل ہوگا۔امارات کے نائب صدر شیخ محمد بن راشد آل مکتوم کی زیر صدارت اماراتی کابینہ نے رواں سال جولائی میں اس منصوبے کی منظوری دی تھی۔

دنیا میں اپنی نوعیت کی پہلی اسکیم کے تحت سرکاری ملازم کاروبار کےلیے کوشش کرسکیں گے۔ حکام کا کہنا ہے کہ اس منصوبے کا مقصد مستقبل میں امارات کی معیشت کوفائدہ پہنچانا ہے۔

یہ ’50 پروجیکٹس’ کے دائرہ کار میں آتا ہے، ترقیاتی اور اقتصادی منصوبوں کی ایک سیریز جس کا مقصد متحدہ عرب امارات کی ترقی کو تیز کرنا ہےاس منصوبے میں معیشت، انٹرپرینیورشپ، جدید مہارت، ڈیجیٹل معیشت، خلائی اور ٹیکنالوجی سمیت کئی اہم شعبوں کا احاطہ کیا گیا ہے۔

روسی رکن پارلیمنٹ اور صدر پیوٹن کے نقاد کی بھارت میں پراسرار ہلاکت

ایمریٹس نیوز ایجنسی ڈبلیو اے ایم نے رپورٹ کیا کہ خود روزگار کے لیے انٹرپرینیورشپ چھٹی کا مقصد متحدہ عرب امارات کے قومی کیڈرز اور ہنر کو بااختیار بنانا اور انہیں انٹرپرینیورشپ کی دنیا سے رجوع کرنے اور اس کے شعبوں کو تلاش کرنے کی ترغیب دینا ہے، جو مستقبل کی قومی معیشت پر مثبت عکاسی کریں گے۔

متحدہ عرب امارات کی حکومت مبینہ طور پر پرائیویٹ سیکٹر میں بزنس انکیوبیٹرز اور کمپنیوں کے ساتھ شراکت داری شروع کرنے اور ان ملازمین کی صلاحیتوں کو بڑھانے کے لیے کام کرے گی جنہوں نے خود روزگار کے لیے وقت حاصل کیا ہے۔ ان اداروں کے ساتھ ایک سپورٹ ایکو سسٹم قائم کیا جائے گا-

خواتین پرپابندیاں،اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کا طالبان حکومت سے پالیسیاں بدلنے کا…