سرکاری ملازمین پر تشدد کے خلاف پریس کلب کے باہر اجتجاجی مظاہرہ

واپڈا ملازمين کا احتجاجی مظاہرہ سرکاری ملازمين پر پولیس تشدد کے خلاف واپڈا ملازمين نے پریس کلب کے باھر احتجاجی مظاہرہ کیا سرکاری ملازمين تنخواہوں کو بڑھانے کے حق میں احتجاج کر رھے تھے تاھم اظہار یکجہتی کرتے ھوۓ ایبٹ اباد میں بھی بھر پور مظاہرہ کیا گیا

مظاہرے سے قاٸدین نے خطاب کرتے ھوۓ کہا کہ پولیس کو جن حکمرانوں نے حکم دیا وہ مزدوروں اور منحت کشوں کی روٹی دال بند کرنے پر لگے ہیں گورنمنٹ ہوش کے ناخن لے یاد رہے اس احتجاجی مظاہرے کو گورنمنٹ نے تسیلم کر لیا ھے اور 25فی صد تنخواہ بڑھا دی گئی مگر مزدور اجرت 500ہی لے رھا ھے

مزدور کے حق میں اج تک کوٸی سرکاری آدمی نے آواز بلند نہیں کی منہگاٸی کے اس طوفان میں صرف مزدوروں کو رگڑا لگتا ہے فاٸدہ سرکاری ملازمين کو ہی ھمیشہ ملتاھے

جبکہ دوسری جانب مانگل تھانہ کی حدود سے لاش برآمد تھانہ مانگل کیکر موڑ سے نامعلوم شخص کی لاش برآمد کی گئی ہے عمر کے لحاظ سے چالیس سالہ شخص کے منہ پر ٹیپ لگی ھوٸی تھی جسے تشدد کرکے قتل کیا گیا

پولیس نے مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کر دی ھے تاھم مقتول کی شناخت نہ ھو سکی اطلاع ملتے ھی پولیس موقع پر پنہچ گی تھی پوسٹمارٹم کے نعش کو ڈسٹرکٹ ھسپتال بھیج دیا بے دردی سے قتل ھونے والے شخص کے ھاتھ پاوں بھی باندھے ھوۓ تھے شناخت کے لیے نعش کو سرد خانے میں رکھ دیا گیا ھے
ڈسٹرکٹ رپورٹر ایبٹ آباد سردار الطاف

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.