fbpx

سعودی عرب کے دارلحکومت پر چار ڈرون طیاروں سے حملہ

سعودی عرب کے دارلحکومت پر چار ڈرون طیاروں سے حملہ

باغی ٹی وی : یمن کے حوثیوں کے ترجمان نے جمعرات کے روز کہا کہ اس گروپ نے چار ڈرون استعمال کرکے سعودی عرب کے دارالحکومت ریاض میں اہم اہداف پر حملہ کیا تھا۔

ایران سے منسلک حوثیوں نے ریاض کی طرف سے گذشتہ ماہ کی جانے والی جنگ بندی کی تجویز کو مسترد کر دیا ہے کیونکہ حوثیوں کا کہنا ہے کہ سعودی فوجی اتحاد شمالی یمن میں ان کے زیر کنٹرول علاقوں پر عائد فضائی اور سمندری ناکہ بندی ختم نہیں‌کی ، جب تک یہ ناکہ بندی ختم نہیں کی جاتی تب تک یہ جنگ بندی بے معنی ہے ..

سعودی سرکاری ٹی وی کے مطابق ، سعودی زیرقیادت فوجی اتحاد نے کہا کہ اس نے یمن میں اپنے لانچ پیڈ پر ایک حوثی بیلسٹک میزائل تباہ کردیا ہے ، یہ اسلحہ یمن کے صوبے معرب میں گیس سے مالا مال علاقے کی طرف لانچ کیا گیا تھا۔

واضح رہے کہ ایران اور سعودی پراکسی جنگ یمن کے اندر لڑی جار ہی ہے جس میں دنوں‌طرف سے ایک دوسرے پر الزامات لگائے جاتے ہیں. جب سے بائیڈن اقتدار سمبھالا ہے تب سے سعودی عرب حوثیوں کے حملے تیز ہوئے ہیں.

اس تنازعہ کو ، خطے میں سعودی عرب اور ایران کے مابین پراکسی جنگ کے طور پر دیکھا جاتا ہے ، جس کی وجہ اقوام متحدہ کا کہنا ہے کہ یہ دنیا کا سب سے بڑا انسانی بحران ہے۔
یمن میں تمام انفراسٹرکچر تباہ ہوگیا ہے . عام لوگ شدید غذائی قلت کا شکار ہیں‌.

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.